کام چور اور نکمے اساتذہ کی چھٹی

کام چور اور نکمے اساتذہ کی چھٹی

 لاہور(ایجوکیشن رپورٹر)محکمہ تعلیم پنجاب کی صوبہ بھر میں نکمے اور کام چور اساتذہ کے خلاف بڑی کارروائی،صوبہ بھر کے 1000سے زائد اساتذہ برطرف ،5300سے زائد کی تنخواہوں میں کٹوتی ، 230کو سالانہ ترقیوں سے محروم جبکہ85 اساتذہ کو جبری ریٹائرڈ کر دیا ۔13000سے زائد مسلسل غیر حاضر اساتذہ کے خلاف انکوائریاں زیر التواء ہیں ۔تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم سکول پنجاب نے صوبہ بھر کے 36اضلاع میں پرائمری ،مڈل ،ہائی اور ہائیر سیکنڈری سکولوں میں مختلف اوقات میں چیکنگ کے دوران 25000سے زائد اساتذہ کے خلاف کارروائی کی گئی جن میں ڈی جی خان کے 1435فیصل آباد کے 1363 ،سیالکوٹ کے194بہاولنگر کے 941 ، گوجرانوالہ کے1116,اوکاڑہ 548،گجرات 766, ننکانہ صاحب 618,سرگودھا841, ،میانوالی 805 ،راولپنڈی 1067،اٹک کے 453،خوشاب 324،رحیم یار خان 1382،جھنگ 979،ملتان 575،قصور اور شیخوپورہ کے 757اساتذہ شامل ہیں ۔محکمہ تعلیم سکول ایجوکیشن کے مطابق سرگودھا کے 90 اساتذہ کو نوکری سے فارغ کیا گیا جبکہ گجرات 89،خوشاب 68 ، میانوالی 47 گوجرانوالہ 56،ڈی جی خان 42اٹک 30 ، بہاولپور 33بھکر 32،جھنگ 35،راجن پور62، ساہیوال 59،جبکہ قصور کے 26اساتذہ بھی غیر حاضری پر ملازمت سے محروم کر دیا گیا ۔اس کے علاوہ خوشاب اور راجن پور کے 15 ، وہاڑی کی 7،بھکر 05،اٹک اور بہاولپور میں چار چار اساتذہ کو جبری ریٹائرڈ کیا گیا ۔اسی طرح بہاولنگر جھنگ اور شیخوپورہ میں ایک ایک ٹیچر کو جبری ریٹائر ڈ کرنے کے احکامات صادر کئے گئے ،علاوہ ازیں بھکر کے 46،ملتان 51،بہاولپور 19 جبکہ گوجرانوالہ کے 9اساتذہ کو سالانہ ترقیوں سے محروم کر دیا گیا۔محکمہ تعلیم کے اعدادو شمار کے مطابق سیالکوٹ کے 1652،لاہور 1197،فیصل آباد 1036،رحیم یار خان میں 1245سمیت 13000سے زائد ٹیچروں کے خلاف انکوائریاں زیر التواء ہیں ۔اس ضمن میں وزیر اعلی مانیٹرنگ فورس سکول ایجوکیشن کے ڈائریکٹر مانیٹرنگ رانا عبدالقیوم نے روزنامہ پاکستان کو بتایا کہ سکولوں میں معیار تعلیم اور تدریسی ماحول کو بہتر بنانے کے لئے بغیر اطلاع ڈیوٹیوں سے مسلسل غیر حاضر رہنے والے اساتذہ کے خلاف کارروائی کی گئی ہے اس کے علاوہ عادی کام چور اساتذہ کو قانون کے شکنجے میں کسنے کے لئے کاروائی کا اغاز کر دیا گیا ہے ۔دوران گفتگو انہوں نے بتایا کہ جنوری 2016سے جنوری 2017 تک مانیٹرنگ فورس نے سرکاری سکولوں میں مختلف اوقات کے دوران جانچ پڑتال کی اور اس کے بعد اساتذہ کے خلاف کارروائی کی گئی ہے

مزید : میٹروپولیٹن 1