الطاف حسین کی گرفتار ی کیلئے ایف آئی اے کو ٹاسک مل گیا ، تین رکنی کمیٹی تشکیل

الطاف حسین کی گرفتار ی کیلئے ایف آئی اے کو ٹاسک مل گیا ، تین رکنی کمیٹی تشکیل

 اسلام آباد (عرفان طارق ،نمائندہ خصوصی)وفاقی حکومت کی ہدایت پر بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کی گرفتاری کیلئے ایف آئی اے حرکت میں آگئی ہے اور ایف آئی اے کی تین رکنی کمیٹی بھی تشکیل دیدی گئی ہے ،اور اس حوالے سے ایف آئی اے نے انٹر پول سے بھی رابطہ کرنے کیلئے لائحہ عمل طے کر لیا ہے ،انتہائی ذمہ دار ذارئع کے مطابق وزارت داخلہ کی ہدایت پر انتہائی سنگین مقدمات میں مطلوب بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کی گرفتاری کیلئے ایف آئی اے نے ریڈ وارنٹ تیار کر لیا ہے ، جس میں بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کے خلاف دہشت گردی اور معصوم جانوں کے قتل کے مقدمات سے متعلق چارج شیٹ تیار کی گئی ہے ،جبکہ اس حوالے سے ان تمام قانونی پیچیدگیوں کا جائزہ لینے کیلئے آیف ائی اے کے افسران پر مشتمل ایک تین رکنی کمیٹی بھی تشکیل دیدی ہے ،اور یہی کمیٹی تمام قانونی پہلو کا جائزہ لینے کے بعد جلد انٹرپول سے باقاعدہ تحریری طور پر ایک خط بھجوایا جائے گا جس میں الطاف حسین کی گرفتاری کیلئے مدد کی درخواست کی جائے گی ،جبکہ ایف ائی اے حکام نے انٹر پول سے رابطہ کرنے کیلئے خط تیار کر لیا ہے ،جیسے اسی ہفتے انٹرپول کو بھجوا دیا جائے گا ،ذرائع کے مطابق انٹرپول کو خط بھجوانے کے ساتھ ساتھ اس کی ایک کاپی برطانوی حکومت کو بھی بھجوائی جائے گی ،اوربانی ایم کیوایم کی گرفتاری کیلئے تشکیل دی گئی کمیٹی انٹرپول کے ساتھ رابطے میں رہے گی ،اور وزیر داخلہ چوہدی نثار کو وقتا فوقتا انترپول سے ہونے والی خط و کتابت سے آگاہ کرتی رہے گی ، تین روز قبل وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان نے باقاعدہ طور پر الطاب حسین کی گرفتاری کیلئے ریڈ وارنٹ کی منظوری دی تھی ،جس پر ڈی جی ایف ائی اے نے باقاعدہ طور پر عمل درآمد شروع کر دیا تھا ۔واضح رہے کہ حکومت پاکستان کو بانی ایم کیو ایم الطاف حسین انتہائی سنگین نوعیت کے مقدمات میں مطلوب ہیں ،الطاف حسین پر جو مقدمات ہیں ان میں دہشت گردی ایکٹ اور قتل کے کیسز شامل ہیں ،الطاف حسین انیس سو بہانوے میں ملک سے فرار ہو کر برطانیہ میں جلاوطنی کی زندگی گزار رہے ہیں ۔اور وہیں سے بیٹھ کر پاکستان میں اپنی سیاسی سرگرمیاں سر انجام دے رہے تھے ۔لیکن انہی کے رکن مصطفی کمال کی بغاوت کے بعد ان کا زوال شروع ہو گیا ۔۔

مزید : صفحہ اول