بھارت کا مسعود اظہرکو دہشتگرد قرار دلوانے کی مخالفت پر چین سے شدید احتجاج

بھارت کا مسعود اظہرکو دہشتگرد قرار دلوانے کی مخالفت پر چین سے شدید احتجاج

نئی دہلی(اے این این ) بھارت نے کالعدم جیش محمد کے سربراہ مسعود اظہر کانام دہشت گردوں کی عالمی فہرست میں شامل کرنے کی مسلسل مخالفت کرنے پر چین سے شدیداحتجاج کیاہے۔ بھارتی اخبار ’’ٹائمز آف انڈیا‘‘ کی رپورٹ کے مطابق وزارت خارجہ امور نے نئی دہلی میں چینی سفارت خانے اور بیجنگ میں واقع بھارتی سفارت خانے میں مراسلہ بھیجنے کی تصدیق کی ہے جن میں مسعود اظہر کانام دہشت گردوں کی عالمی فہرست میں شامل کرنے کی مسلسل مخالفت کرنے پر چین سے شدیداحتجاج کیاگیاہے۔ واضح رہے کہ گذشتہ دنوں چین نے امریکا، برطانیہ اور فرانس کی جانب سے اقوام متحدہ کے سیکیورٹی کونسل کی کمیٹی 1267 میں مسعود اظہر پر پابندی عائد کرنے کی درخواست کو ویٹو کیا تھا۔19 جنوری کو پیش کی گئی اس درخواست پر سیکیورٹی کونسل کے 15 میں سے 14 ممبران نے رضامندی ظاہر کی تاہم چین کی جانب سے مسعود اظہر پر پابندی کو مسترد کردیا گیا۔ چینی وزارت خارجہ کے اس بیان کہ مسعود اظہر پر پابندی کے امریکی اقدام میں ناکامی اتفاق رائے نہ ہونے کی وجہ سے ہوئی کا جواب دیتے ہوئے بھارتی وزارت خارجہ کے ترجمان وکاس سوارپ کا کہنا تھا کہ اگر چین کی پوزیشن میں کوئی تبدیلی آتی ہے تو اتفاق رائے کا امکان ہوسکتا ہے۔ وکاس سوارپ نے مسعود اظہر کے معاملے پر دو طرفہ مذاکرات کی چینی تجویز کو بھی مسترد کردیا۔ ترجمان بھارتی وزارت خارجہ کا کہنا تھا کہ 'ہم اس پر متفق ہیں کہ انسداد دہشت گردی کی تجویز کے طور پر خطرناک دہشت گرد رہنما مسعود اظہر پر پابندی عائد کی جائے، جن کی تنظیم جیش محمد کو پہلے ہی کالعدم قرار دیا جاچکا ہے۔ یاد رہے کہ بھارت کی جانب سے مستقل کوشش جاری ہیں کہ کسی بھی طرح مسعود اظہر کا نام اقوام متحدہ کی عالمی دہشتگردوں کی فہرست میں شامل کیا جائے جبکہ اس معاملے پر اقوام متحدہ کی سیکیورٹی کونسل کے متعدد رکن ممالک سے بات چیت جاری ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول