سرکاری یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز کی تقرری میرٹ اور قواعد کے مطابق کی جائیں

سرکاری یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرز کی تقرری میرٹ اور قواعد کے مطابق کی جائیں

 پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ نے احکامات جاری کئے ہیں کہ خیبرپختونخواکی تمام سرکاری یونیورسٹیوں کے وائس چانسلروں کی تقرریاں میرٹ اورقواعدوضوابط کے مطابق کی جائیں اور تقرری کے عمل میں کوئی بے قاعدگی نہ کی جائے پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس یحیی آفریدی اورجسٹس یونس تہیم پرمشتمل دورکنی بنچ نے یہ آبزرویشن گذشتہ روز پروفیسرامیرنواز اورڈاکٹرشفیق الرحمان کی جانب سے دائررٹ پٹیشن پردیتے ہوئے رٹ نمٹادی اس موقع پر درخواست گذار وں کے وکیل پروفیسر(ر)نذیر ایڈوکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ2012ء میں حکومت نے مختلف سرکاری یونیورسٹیوں کے وائس چانسلرزکی بھرتی کے لئے اشتہار جاری کیاتھاجس کے خلاف درخواست گذاروں نے رٹ کی تھی کہ وائس چانسلروں کی تقرری کے حوالے سے کوئی رولزنہیں ہیں اور نہ ہی کوئی قواعدوضوابط موجود ہیں اور تقرریوں کے حوالے سے اشتہارغیرقانونی اورغیرآئینی ہے جبکہ بعدازاں رٹ کی سماعت کے دوران ہائی کورٹ نے حکم دیاتھا کہ جووائس چانسلرزبنے ہیں انہیں بھی پارٹی بنایاجائے اس موقع پرپروفیسرنذیرایڈوکیٹ نے عدالت کو بتایا کہ جن وائس چانسلروں کے خلاف ہم آئے تھے انہوں نے تو اپنی مدت پوری کرلی ہے اوراب اس حوالے سے قواعد وضوابط بنائے جارہے ہیں جس پرفاضل بنچ نے وائس چانسلروں کی تقرری کے عمل میں شفافیت لانے سے متعلق آبزرویشن جاری کرتے ہوئے رٹ پٹیشن نمٹادی ۔

مزید : کراچی صفحہ اول