حکومت سرکلرریلوے متاثرین کے حوالے سے پالیسی واضح کرے : عارف علوی

حکومت سرکلرریلوے متاثرین کے حوالے سے پالیسی واضح کرے : عارف علوی

 کراچی(اسٹاف رپورٹر)پاکستان تحریک انصاف سندھ کے صدر و رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر عارف علوی نے کہا ہے کہ میڈیا چینلز اور اخبارات میں آئے روز کراچی سرکلر ریلو ے کے حوالے سے خبریں شائع ہو رہی ہیں جس سے عوا م میں شدید خوف و ہراس پایا جاتا ہے۔ حکومت عوام کو آگاہ کرے کہ منصوبے کے لئے کتنی زمین درکار ہے اور کن شرائط پر زمین متاثرین سے لی جائے گی ۔ کراچی سرکلر ریلوے منصوبے میں جن کے گھر مسمار ہونے ہیں ان متاثرین کیلئے حکومت متبادل معاوضہ یا جگہ کے حوالے سے حکومت اپنی پالیسی واضح کرے۔ یہ باتیں انہوں نے پارٹی سیکریٹریٹ’’انصاف ہاؤس‘‘ کراچی میں سرکلر ریلوے سے متاثرہ کالونیوں کے ایک وفد سے ملاقات کے موقع پر بات چیت کرتے ہوئے کہیں۔ اس موقع پر سندھ کے نائب صدر قادری بھائی، ایڈیشنل سیکریٹری دیوان سچل، ترجمان کراچی دوا خان صابر اور دیگر رہنما بھی موجود تھے۔ ڈاکٹر عارف علوی نے مزید کہا کہ یہ آبادیاں نہ صرف 1960سے قائم ہیں بلکہ کچی آبادی میں بھی رجسٹرڈ ہے اس کے علاوہ یہاں گیس ، پانی، بجلی اور ٹیلی فون اور اس حلقے میں ووٹ کا حق دیکر حکومت ان کو متعلقہ حلقوں کی آبادی تسلیم کر چکی ہے لہذا ان متاثرین کو اس بات کی ضمانت دی جائے کہ ان کو قبضہ مافیا تصور نہیں کیا جائے گا اور جب تک متاثرین کو متبادل جگہ ، رہائش یا معاوضہ فراہم نہیں کیاجاتا تب تک ان کے گھروں کو مسمار نہیں کیا جائے گا ۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ سرکلر ریلوے کے متاثرین کو کو پانچ کلو میٹر کے اندر شہر میں متبادل جگہ فراہم کی جائے تاکہ ان کے بچوں کی تعلیم ،صحت اور روزگار متاثر نہ ہو۔ہم مطالبہ کرتے ہیں کہ متبادل جگہ کی صورت میں مکانات کی تعمیر کے لئے متاثرین کو تعمیر ی اخراجات کے حوالے سے مناسب معاوضہ ادا کیا جائے اور متاثرین سرکلر ریلوے کو حکومت پاکستان کے کچی آباد ی ایکٹ کے عین مطابق حقوق دئے جائیں۔ جو آبادیاں اس منصوبے میں نہیں آتی ان کو فی الفور مالکانہ حقوق دیئے جائیں ۔ پاکستان تحریک انصاف اس ترقیاتی منصوبے کے حق میں ہے لیکن غریب عوام کے نقصان کسی صورت برداشت نہیں کیا جائے گا ۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر