سیلانی ویلفیئرانٹرنیشنل ٹرسٹ کا امدادی وفد انقرہ پہنچ گیا

سیلانی ویلفیئرانٹرنیشنل ٹرسٹ کا امدادی وفد انقرہ پہنچ گیا

کراچی(اسٹاف رپورٹر)سیلانی ویلفیئر انٹرنیشنل ٹرسٹ کا امدادی وفد استنبول سے ترکی کے دارالحکومت انقرہ پہنچ گیا۔ شامی متاثرین کے کیمپوں کے دورے کے دوران رقت آمیز مناظر وفد کا سرکاری سطح پرخیرمقدم ۔تفصیلات کے مطابق ترک وزیراعظم کے مشیر اوروزارت عظمیٰ کی نگرانی میں چلنے والے سماجی ادارے آفاد(AFAD)کے نائب صدر فتح اوزران نے کہاہے کہ ترک عوام اورحکومت پاکستانی حکومت اورپاکستانیوں کوقدر کی نگاہ سے دیکھتے ہیں تیزی سے بدلتے ہوئے بین الاقوامی حالات کے باعث ترکی مختلف بحرانوں میں گھرے ہوئے ہونے کے باوجود شام کے متاثرین کی میزبانی کا فریضہ قوت ایمانی سے ادا کررہا ہے اورترکی قوم نے سلطنت عثمانیہ کی روایات کوآج بھی زندہ رکھا ہواہے ۔ان خیالات کااظہار انہوں نے سیلانی ویلفیئر انٹرنیشنل ٹرسٹ پاکستان کے وفد کوبریفنگ دیتے ہوئے کیا۔وفد کی سربراہی عامراقبال مدنی جبکہ ارکان میں زبیر اشرفی، خرم قادری، سکندرداؤد،محمد ناصر کے علاوہ ترکی میں متعین سیلانی کے نمائندے محمدعثمان بھی موجود تھے۔ جبکہ مترجم محمداصغر کے علاوہ آفاد کے بین الاقوامی امور کے نگران فقرودین گوگریہ بھی موجود تھے شام کے متاثرین کی امداد کے طویل المدت اورقلیل المدت کے منصوبوں کی تفصیلات سے آگاہی کے بعدسیلانی کے وفد کے سربراہ نے خوراک کے حوالے سے سولہ ہزار شامی متاثرین کوخوردونوش کی فوری اشیاء فراہم کرنے کااعلان کیا اورکہاکہ ترکی کی سرحد گزشتہ سات سالوں سے شامی متاثرین کیلئے کھلی رہنے کے باعث ترکی میں متاثرین کی تعداد نہ صرف 28لاکھ تک جاپہنچی ہے بلکہ شام کی حدود میں ترکی کی جو نئے کیمپس کھولے گئے ہیں ان میں بھی متاثرین کی تعداد ہزاروں تک جاپہنچی ہے بعدازاں سیلانی کا وفد جب شامی متاثرین کے کیمپوں میں پہنچاتو وہاں خوراک کی قلت کے باعث مختلف امراض کے لوگوں سے ملاقاتوں کے دوران سیلانی کاوفد انہیں دیکھ کر اشکبار ہوگیا اوران پر گزرنے والی قیامت خیز واقعات سننے کا وفد میں حوصلہ نہیں رہا عامراقبال مدنی کے مطابق اس عبوری امداد کے بعدسیلانی امدادی کاموں کی توسیع کے لئے آفاد (AFAD)کے منتظمین کے ہمراہ نئے شامی کیمپوں کے دورے پر بھی جارہا ہے جبکہ کیمپوں میں خوراک کے علاوہ صحت وصفائی کے امدادی کاموں کی بھی بڑے پیمانے پر ضرورت موجود ہے۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر