جہلم،محکمانہ ناانصافی کیخلاف 45سالہ شخص نے خودکشی کرلی

جہلم،محکمانہ ناانصافی کیخلاف 45سالہ شخص نے خودکشی کرلی

جہلم (نامہ نگار) پولیس ملازم نے محکمانہ نا انصافی پر زہریلی گولیاں کھا کر خود کشی کر لی 45 سالہ شہزاد یونس کو گجرات میں بھائیوں کے مقدمہ میں ملوث کرکے نوکری سے نکال دیا گیا تھا ۔ تشویشناک حالت میں ہسپتال پہنچاتے ہوئے راستے میں دم توڑ گیا پوسٹمارٹم کے بعد لاش ورثہ کے حوالے ۔ تفصیلات کے مطابق 45 سالہ شہزاد یونس جو کہ جہلم کے گاؤں خلاص پور کا رہائشی تھا پنجاب پولیس میں 24 سال ملازمت کے بعد چند دن پہلے گجرات میں ڈیوٹی دے رہا تھا کہ اسے بھائیوں ، رشتہ داروں کے مقدمہ میں بلاوجہ پھنسا کر نوکری سے نکال دیا گیا تھا جس کی وجہ سے اس نے گزشتہ روز گھر میں زہریلی گولیاں کھا کر خودکشی کرنے کی کوشش کی پتہ چلنے پر گھر والوں نے مقامی ہسپتال پہنچایا جہاں سے اسے ڈی ایچ کیو ہسپتال ریفر کر دیا گیا لیکن وہ راستے میں ہی دم توڑ گیا ۔ اطلاع ملتے ہی پولیس کے ملازم بھی ہسپتال پہنچ گئے پولیس نے لاش پوسٹمارٹم کے بعد ورثہ کے حوالے کردی شہزاد یونس کے تین بچے دو بیٹے اور ایک بیٹی ہے اس کا والد یونس بھی پولیس افسر تھا۔

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر