بٹ خیلہ ،ذہنی مریض مسلح ڈاکٹر نے 24 گھنٹے بیوی کو یرغمال بنایا

بٹ خیلہ ،ذہنی مریض مسلح ڈاکٹر نے 24 گھنٹے بیوی کو یرغمال بنایا

بٹ خیلہ (بیورو رپورٹ)24گھنٹے اپنی بیوی کو یرغمال بنانے والے ذہینی مریض مسلح ڈاکٹر کو لیویزکے جوانوں اور تحریک انصاف کے کارکنوں نے جان پر کھیل کرقابو کر لیاجبکہ بیوی کو بحفاظت بازیاب کرالیا گیاڈاکٹر نے قریب آنے والوں پر گیارہ فائر کئے تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا پستول بر آمد کر لیا گیا واقعے کے مطابق یونین کونسل تھانہ بانڈجات کے گاؤں گنیار کے بیسک ہیلتھ یونٹ کا میڈیکل آفیسر ڈاکٹر اسد اللہ جو کہ ذہنی مرض شازوفرینا کا مریض ہے اپنے نوزائید ہ بچے کے جاں بحق ہونے پر دلبرداشتہ ہوگیا اور پستول لے کراپنی بیوی کو بی ایچ یو کے سرکاری گھر کے کمرے میں یر غمال بنالیاو اقعے کی اطلاع جنگل کی آگ کی طرح پورے علاقے میں پھیل گئی جبکہ اسٹنٹ کمشنر سہیل احمد پوسٹ کمانڈر زسمیع اللہ باچہ و صاحب رحیم لیویز نفری اور اراکین ضلع کونسل حاجی فدا محمد کفایت اللہ اور افضل حسین موقع پر پہنچ گئے اس دوران مسلح ڈاکٹر نے ملنے اور بات کرنے کی کوشش کرنے والے رشتہ داروں وغیرہ پر گیارہ فائر بھی کئے تاہم کوئی جانی نقصان نہیں ہوا ساری رات صورت حال جوں کی توں رہی تاہم صبح انتظامیہ نے کاروائی کا فیصلہ کیا لیویز فورس کے سپاہیوں فرمان کمین سید مشتاق اور تحریک انصاف کے مقامی رہنماؤں اکرام اللہ اور اسد خان نے دیوار سے کود کرگھر میں داخل ہو گئے اور جان پر کھیل کرمسلح ڈاکٹر کو دبوچ لیا اور یر غمال بنائی بیوی کو بازیاب کرالیااے سی نے اس موقع پر میڈیا کو بتایا کہ کاروائی میں زیادہ وقت لگانے کی اصل وجہ کسی بھی جانی نقصان سے بچنا تھاجس میں میں ہم نے کامیا بی حا صل کی انھوں نے لیویز اہلکاروں اور پی ٹی آئی کے ورکرز کی بہادری کو سراہا ۔

مزید : پشاورصفحہ آخر