بھارت کے انتہائی طاقتورشخص کاقریبی عزیز آئی ایس آئی کیلئے جاسوسی کے الزام میں گرفتار

بھارت کے انتہائی طاقتورشخص کاقریبی عزیز آئی ایس آئی کیلئے جاسوسی کے الزام ...
بھارت کے انتہائی طاقتورشخص کاقریبی عزیز آئی ایس آئی کیلئے جاسوسی کے الزام میں گرفتار

  

نئی دہلی (ڈیلی پاکستان آن لائن)بھارتی ریاست مدھیہ پردیش میں آئی ایس آئی کیلئے جاسوسی کا نیٹ ورک چلانے کے الزام میں بھارتیہ جنتا پارٹی کے رہنماءکن سمیت 11افراد کو حراست میں لے لیاگیاجبکہ بھارت کے اپنے ہی میڈیا نے انسداددہشتگردی سکواڈ کی طرف سے 11افراد کی گرفتاری کے بعد ریاست میں سیاسی الزامات کا کھیل شروع ہونے کا عندیہ دیدیا۔کانگریس نے دعویٰ کیا ہے کہ گرفتار افراد میں دھروسیکسینا بھی شامل ہے جو بھارتیہ جنتا پارٹی کے آئی ٹی سیل کے ساتھ کام کررہاہے ،دوسری طرف پارٹی نے اپنے آپ کو سیکسینا سے الگ کرلیاتاہم ملزم کی شوراج سنگھ چوہان اور بی جے وائے ایم ڈسٹرکٹ ہیڈانشل تواری کیساتھ تصاویروائرل ہوگئیں ۔

سوشل میڈیا پر تصویر شیئرکرتے ہوئے ایک شخص نے لکھاکہ ’ مدھیہ پردیش سے آئی ایس آئی کے جاسوس پکڑے گئے، ان میں سے ایک بی جے پی کا رکن اور وزیراعلیٰ شوراج چوہان کا قریبی ہے ، یہ لوگ قوم پرستی کو فروغ دے رہے تھے ‘۔

صرف یہی نہیں بلکہ بی جے پی کے منتخب شدہ رکن کے قریبی عزیز جتندرسنگھ کو بھی حراست میں لے لیاگیاجبکہ ان کے یونین منسٹر نریندرا تومار اور ایم پی منسٹر مایاسنگھ سے بھی قریبی تعلقات ہیںتاہم پارٹی نے باضابطہ طورپر پارٹی ، پارٹی رہنماﺅں یا گرفتارافراد کے تعلقات کی تردید کی ہے اور بی جے پی کے ایک رہنماءنے نام ظاہر نہ کرنے کی شرط پر انڈیاٹوڈے کو بتایاکہ اپنی صفوں میں آئی ایس آئی کی دراندازی پر انہیں تشویش ہے ۔رپورٹس میں دعویٰ کیاگیاہے کہ انسداددہشتگردی سکواڈ نے بھارتی ملٹری آپریشنز کی جاسوسی کے لیے آئی ایس آئی کاعالمی نیٹ ورک توڑ دیا ہے ، گرفتار افرادلیگل چینلز سے بچتے ہوئے افغانستان ، پاکستان ، بنگلہ دیش اور نیپال سے آنے جانیوالی کالز کو ہینڈل کرتے تھے ۔

سیکیورٹی اداروں نے دعویٰ کیا ہے کہ ملزمان کے قبضے سے سموں کی 40جیکٹس اور 3000سمیں بھی برآمد کرلی گئیں ۔ آپریشن کی سربراہی کرنیوالے سنجیوشامی کاکہناتھاکہ مزید لوگ بھی جلد سلاخوں کے پیچھے ہوں گے ۔

مزید : بین الاقوامی