دو سالوں میں ریلوے ٹھیک نہ ہوتی تو وزارت سے استعفیٰ دے دیتا:سعد رفیق

دو سالوں میں ریلوے ٹھیک نہ ہوتی تو وزارت سے استعفیٰ دے دیتا:سعد رفیق
دو سالوں میں ریلوے ٹھیک نہ ہوتی تو وزارت سے استعفیٰ دے دیتا:سعد رفیق

  

لاہور(آن لائن )وفاقی وزیر ریلوے خواجہ سعد رفیق نے کہا ہے کہ اگر میں دو سالوں میں ریلوے کی حالت زار کو بہتر نہ کر سکتا ہوتا تو میں یقینا وزارت ریلوے سے استعفی دے چکا ہوتا۔ ریلوے کا خسارہ کو 32 ارب روپے سے کم کرکے 27 ارب روپے تک لے آئے ہیں جبکہ رواں مالی سال میں ریلوے نے اپنی آمدنی کے مقررہ ہدف سے 7 ارب روپے زیادہ کمائے ہیں۔

فرانس :دہشت گردی کی سازش کے الزام میں لڑکی سمیت 4مشکوک افراد گرفتار

تفصیلات کے مطابق میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ ریلوے میں کام کی رفتار اگر یہی رہی تو باقی ٹرینوں کی حالت زار بھی بہتر ہو جائے گی، میں ان وزار میں سے نہیں جو خود فیصلے کرتے ہیں۔ تنخواہ دار طبقہ اللہ کا ولی ہے جو ان حالات میں بھی اپنی تنخواہ میں گزار کرتا ہے۔ گزشتہ روز رائیونڈ ریلوے سٹیشن کی ازسرنو تعمیر کے حوالے سے منصوبے کا سنگ بنیاد رکھنے کے بعد تقریب کے شرکاءسے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ راﺅنڈ شہر بین الاقوامی اہمیت کا حامل ہے۔ اللہ کریم کے نام کی سربندی کے لئے اسی شہر سے قافلے نکلتے ہیں اور واپس آتے ہیں۔ اس ریلوے سٹیشن سے رائیونڈ کے شہریوں کو تو سہولت دستیاب ہوگی مگر تبلیغی لوگ بھی اس سے مستفید ہوں گے، وہ ریلوے سٹیشن بھوت بنگلوں کا منظر پیش کررہے تھے۔

انہوں نے کہا کہ یہ بھی حقیقت ہے کہ سی پیک کا روٹ بھی رائیونڈ ریلوے سٹیشن سے ہوکر گزرے گا۔ اس منصوبے کے بعد سست روی کا شکار ٹرینیں 160 میل فی گھنٹہ کی رفتار سے چل سکیں گے، لاہور اور کراچی کے درمیان 17 گھنٹے کا فاصلہ کم ہوکر 10 سے 12 گھنٹے کا ہوکر رہ جائے گا۔ انہوں نے رائیونڈ ریلوے سٹیشن پر بزنس ٹرین کو سٹاف دینے کی منظوری کا اعلان کرتے ہوےءکہا کہ جب تک سیاسی لوگ اور بیورو کریسی ایک پیج پر نہیں ہوں گے تو ادارے مضبو ط نہیں ہوںگ ے۔ ملک میں قحط ضرور ہے لیکن اتنا بھی نہیں کہ دیانتدار لوگ نہ ملیں۔ انہوں نے کہا کہ ہم بنیادی طور پر اپوزیشن کے لوگ ہیں اور اپنی جماعت میں بھی اپوزیشن میں رہتے ہیں۔ ٹرین حادثات کا ہونا حقیقت ہے لیکن آج پاکستان ریلوے تین سال پرانا ریلوے نہیں رہا۔ ہم نے عوام کی سہولت کے لئے 48 ٹرینوں کو ای ٹکٹنگ پر منتقل کردیا ہے اور آئندہ عام انتخابات سے قبل محکمہ ریلوے مزید بہتر ہو جائے گا۔ تقریب سے علاقے کے ایم این اے افضل کھوکھر، چیف ایگزیکٹو ریلوے جاوید انور کوکب سمیت معروف مذہبی سکالر مولانا طارق جمیل نے بھی خطاب کیا اور کہا کہ جب ادارے شخصیات پر منحصر ہوتے ہیں تو ان کی تبدیلی ناپائیدار ہوتی ہے اگر کسی علاقے میں دیانتدار تھانے دار آجائے تو علاقے کے چور خود بھاگ جاتے ہیں اور اگر کوئی وزیر دیانتدار آجائے تو اس محکمے کا پورا نظام تبدیل ہو جاتا ہے۔

مزید : لاہور