شاعر نے ایسا شرمناک شعر کہہ دیا کہ عرب ملک میں اسے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا گیا

شاعر نے ایسا شرمناک شعر کہہ دیا کہ عرب ملک میں اسے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا گیا
شاعر نے ایسا شرمناک شعر کہہ دیا کہ عرب ملک میں اسے پکڑ کر جیل میں ڈال دیا گیا

  

ابوظہبی(مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ عرب امارات کے ’شاعر جذبات‘ سقر الشیہی کو اخلاقی اقدار سے گری ہوئی ایک نظم سوشل میڈیا پر پوسٹ کرنے کے جرم میں قید اور بھاری جرمانے کی سزا سنا دی گئی ہے۔ گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق سقر الشیہی کی طرف سے جنسیت کو ہوا دینے والے جذبات و احساسات کی حامل نظم پوسٹ کیے جانے پر پولیس حرکت میں آئی اور اسے گرفتار کرکے ابوظہبی فیڈرل کورٹ میں پیش کر دیا۔جہاں سے 3ماہ قید اور اڑھائی لاکھ درہم (تقریباً 71لاکھ 36ہزار روپے) جرمانے کی سزا سنا دی گئی۔

جس کا ڈر تھا وہ ہو گیا سعودی حکومت نے اب تک کا سب سے خوفناک اعلان کر دیا،اب کوئی کفیل غیر ملکی کو ملازم ہی نہ رکھے گا کیونکہ۔۔۔لاکھوں پاکستانی نوکریوں سے محروم ہو جائیں گے

رپورٹ کے مطابق سقر الشیہی کے خلاف معاشرے کی مذہبی، اخلاقی اور سماجی اقدار کو نقصان پہنچانے کے الزامات کے تحت مقدمہ چلایا گیا۔ریاست میں سوشل میڈیا اور ٹیکنالوجی کا استعمال کرتے ہوئے اخلاق سے عاری خیالات لوگوں تک پہنچانا جرم ہے۔ متحدہ عرب امارات کے 2012ءکے سائبر کرائم قانون کے تحت اس جرم پر زیادہ سے زیادہ عمر قید اور 30لاکھ درہم تک جرمانہ کیا جا سکتا ہے۔

مزید : عرب دنیا