عدالتوں سے باہر تنازعات کے حل کے لئے ثالثی سینٹرز قائم کرنے کی منظوری ،یکم مارچ سے فعال ہونے کا امکان

عدالتوں سے باہر تنازعات کے حل کے لئے ثالثی سینٹرز قائم کرنے کی منظوری ،یکم ...
عدالتوں سے باہر تنازعات کے حل کے لئے ثالثی سینٹرز قائم کرنے کی منظوری ،یکم مارچ سے فعال ہونے کا امکان

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

لاہور(نامہ نگار خصوصی )چیف جسٹس لاہور ہائیکورٹ مسٹر جسٹس سید منصور علی شاہ نے عدالتوں سے باہر تنازعات کے حل کے لئے ثالثی سینٹرز قائم کرنے کی منظوری دے دی .

 یکم مارچ سے لاہور میں دو ثالثی سینٹرز فعال ہونے کا امکان ہے۔ابتدائی طور پر سیشن کورٹ لاہور کے احاطے میں دو ثالثی سینٹرز بنائے جائیں اور ان سینٹرز میں ایڈیشنل سیشن جج کے عہدے کے جوڈیشل افسران بطور جج تعینات ہوں گے ، اس حوالے سے ورکنگ کی جا رہی ہے اور امکان ہے کہ یکم مارچ کو سیشن کورٹ کے احاطے میں ثالثی سینٹرز فعال ہو جائیں گے، ذرائع کے مطابق ثالثی سینٹرز کی ورکنگ بھی ضلعی عدلیہ کی طرح ہوگی اور ان سینٹرز کے ذریعے معمولی نوعیت کے مقدمات نمٹائے جائیں گے ۔

مزید : لاہور