نا درا کراچی میں پشتو اور بنگلہ زبان بولنے والے لاکھوں افراد کے شناختی کارڈز کے مسائل کو خوامخواہ پیچیدہ بنا رہا ہے، مولانا فضل الرحمن

نا درا کراچی میں پشتو اور بنگلہ زبان بولنے والے لاکھوں افراد کے شناختی کارڈز ...
نا درا کراچی میں پشتو اور بنگلہ زبان بولنے والے لاکھوں افراد کے شناختی کارڈز کے مسائل کو خوامخواہ پیچیدہ بنا رہا ہے، مولانا فضل الرحمن

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

کراچی (صباح نیوز)جمعیت علماء اسلام کے امیر مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ نا درا کراچی میں پشتو اور بنگلہ زبان بولنے والے لاکھوں افراد کے شناختی کارڈز کے مسائل کو خوامخواہ پیچیدہ بنا رہا ہے , جن لوگوں کے پاس 1965 کا ریکارڈ موجود ہے انہیں بھی نوٹسز بھیجے جارہے ہیں, نادرا اپنے دائرہ اختیار میں رہتے ہوئے قانونی تقاضے ضرور پورا کرے مگر کسی پاکستانی کا شناختی کارڈ بلاک کرنا خود غیر قانونی عمل ہے ۔

کراچی کے رہائشی پختون عمائدین کے نمائندہ جرگہ سے گفتگو کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ محض اس بنیاد پر عوام کے شناختی کارڈ بلاک کرنا یا انہیں نوٹسز بھیجا کہ انکی پیدائش کراچی کی نہیں ہے ایسے اقدامات سوائے عوام میں نفرت پیدا کرنے کے اور کچھ بھی نہیں، یہ قانون کس نے بنایا ہے کہ دوسرے صوبوں یا شہروں کے لوگوں کے شناختی کارڈز کراچی میں نہیں بن سکتے ہیں یاجو بنے ہوئے ہیں وہ بلاک کردیئے جائیں؟۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان کے ہرشہری کو یہ حق حاصل ہے کہ وہ ملک میں جہاں کاروبار کرے ، رہائش مستقل یاعارضی اختیار کرے قانون کی روسے کوئی پابندی نہیں ہے ، ہرادارے نے اگر آئین وقانون کی تشریح اپنی منشا اور انداز کے مطابق شروع کردی تو ایسے ادارے تباہ ہوکر رہ جاتے ہیں۔

مولانا فضل الرحمن نے وفد کو یقین دلایا کہ جمعیت علماء اسلام ملکی سطح پر اس عمل پراپنا ردعمل دے چکی ہے جسکا جواب بہرحال حکومت کو دینا ہوگا، کراچی میں جن لوگوں یا برادریوں کو شناختی کارڈز کے حصول میں مشکلات کا سامنا کرنا پڑتا ہے ، جے یو آئی اس سلسلے میں نہ صرف بھر پور کردار ادا کرے گی بلکہ ان مسائل کے حل کیلئے ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔ مولانا فضل الرحمن نے کہا کہ جمعیت علماء اسلام پشاور میں 7 8اور 9 اپریل کو جمعیت علماء کے 100 سال پورے ہونے پر صد سالہ عالمی اجتماع منعقد کر رہی ہے جسکے انتظامات اپنے اخیری مراحل میں ہیں جبکہ تیاریاں اپنے عروج پر ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس صد سالہ اجتماع عالمی میں جہاں عالم اسلام کی سرکردہ شخصیات شرکت کریں گی وہاں امام کعبہ شیخ عبدالرحمن السدیس جمعیت علماء ہند اور دارالعلوم دیوبند کے کے اکا برین سمیت بڑی تعداد میں اکابرین امت شرکت کریں گے ۔

مزید : کراچی