کوہاٹ ،سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن ،67 مشتبہ افرا د گرفتار

کوہاٹ ،سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن ،67 مشتبہ افرا د گرفتار

کوہاٹ(بیورورپورٹ) کوہاٹ کے مختلف علاقوں میں سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کے دوران 67مشتبہ افراد کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔حساس اطلاعات پر ٹارگٹڈ تلاشی آپریشن کی کاروائی جنگل خیل،میاں گان کالونی اور پی اے ایف بیس کے اطراف میں عمل میں لائی گئی ہے۔پولیس اور ایلیٹ فورس کی مشترکہ کاروائی میں زیر حراست افراد کے قبضے سے بڑی تعداد میں اسلحہ ومنشیات اور مشکوک موٹر سائیکلیں بھی تحویل میں لی گئی ہیں۔ زیر حراست مشتبہ افراد میں افغان باشندے اور مطلوب اشتہاریوں کے سہولت کار بھی شامل ہیں۔ڈسٹرکٹ پولیس آفیسر کوہاٹ کیپٹن(ر)واحد محمود کے واضح احکامات کی روشنی میں روپوش اشتہاری مجرموں انکے سہولت کاروں اور جرائم پیشہ عناصر کی سرکوبی کیلئے ضلع بھر میں جاری سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کے تسلسل میں پولیس اور ایلیٹ فورس کی بھاری نفری نے ایس پی آپریشنز صلاح الدین کنڈی اور سرکل ایس ڈی پی اوز کی زیر نگرانی جنگل خیل ،میاں گان کالونی اور پی اے ایف بیس کے اطراف کے علاقوں میں اتوار کی علی الصبح سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کا انعقاد کرتے ہوئے 67مشتبہ افراد کو حراست میں لے لیا۔مختلف مقامات پر تلاشی آپریشن کی کاروائی میں گرفتار مشتبہ افراد میں قانونی وشناختی دستاویزات کے بغیر مقیم دو افغان باشندے اور اشتہاریوں کو پناہ اور دیگر امداد فراہم کرنے والے تین سہولت کار بھی شامل ہیں۔پولیس کی آپریشنل ٹیموں نے ایس ایچ او جنگل خیل صابر حسین بلوچ کی قیادت میں جنگل خیل کے علاقوں چار باغ اور چکڑ میلہ میں ٹارگٹڈ گھروں کی تلاشی لی جبکہ ایس ایچ او تھانہ محمد ریاض شہید آصف محمود کی سربراہی میں پولیس دستوں نے میاں گان کالونی اور پی اے ایف بیس کے اطراف کے علاقوں میں مختلف گھروں کی تلاشی کیساتھ ساتھ ٹارگٹڈ مقامات پراچانک چھاپے مارے۔سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کی ان کاروائیوں میں پولیس کو گرفتار افراد کے قبضے سے بڑی تعداد میں اسلحہ و منشیات بھی ملے ہیں جن میں 3کلاشنکوف،2ریپیٹر،5بندوق،2رائفل،14پستول،مختلف بور کے ہزاروں کارتوس اور ساڑھے چار کلوگرام چرس شامل ہیں۔آپریشن کی کاروائیوں میں گرفتار تمام افراد کو چھان بین کیلئے متعلقہ تھانوں میں منتقل کردیا گیا ہے جہاں اسلحہ ومنشیات رکھنے کے جرم میں بعض افراد کے خلاف مقدمات درج کرلئے گئے ہیں ۔پولیس نے زیر حراست افراد کے قبضے سے سات مشکوک موٹر سائیکلیں بھی تحویل میں لیکر متعلقہ تھانوں میں بند کردئیے ہیں جسکی بابت چھان بین کا عمل جاری ہے۔ حساس معلومات کی بنیاد پر سرچ اینڈ سٹرائیک آپریشن کی کاروائیوں میں خواتین پولیس،بم دسپوزل سکواڈ،کھوجی کتوں اور سول حساس ادارے کے اہلکاروں نے بھی حصہ لیا ۔آپریشن کی کاروائی کے دوران سیکیورٹی ہائی الرٹ کرکے ان علاقوں کی طرف آنے جانے والے راستوں کی سخت ناکہ بندی کرلی گئی تھی اور آپریشنل ٹیموں کو بھاری مشین گنوں سے لیس بکتر بند گاڑیوں کی مدد بھی حاصل رہی۔

مزید : پشاورصفحہ آخر