ملک بھر سے گیس اور آئل کے کنوؤں پر تعینات متعدد چوکیدار فارغ

ملک بھر سے گیس اور آئل کے کنوؤں پر تعینات متعدد چوکیدار فارغ

اسلام آباد (آن لائن) او جی ڈی سی ایل نے ملک بھر سے گیس اور آئل کے کنوؤں پر تعینات متعدد چوکیداروں کو فارغ کر دیا ہے اس پر یونین نے غریب ملازمین کی بحالی کیلئے احتجاجی تحریک چلانے کا عندیہ دے دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق او جی ڈی سی ایل انتظامیہ نے ملک بھر سے گیس اور آئل کے کنوؤں کی نگرانی کرنے والے متعدد چوکیداروں کو نوکری سے نکال دیا ہے اور اس حوالے سے نوٹیفیکیشن جمعہ کی شام کو کیا گیا ہے نکالے جانے والے چوکیداروں نے آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا ہے کہ ہم گزشتہ 8سے10سال سے کام کر رہے ہیں اور گزشتہ روز ہمیں نکال دیا گیا ہے ہم غریب لوگ ہیں حکومت نے ہمارا روزگار چھین لیا ہے انہوں نے کہا کہ وزیراعظم پاکستان عمران خان کے اس علان کے باوجود کہ کسی کو نوکری سے نہ نکالا جائے لیکن اس کے باوجود او جی ڈی سی ایل کی انتظامیہ نے ہمیں نوکری سے فارغ کر دیا ہے۔او جی ڈی سی ایل کی یونین کے صدر راجہ سلیم نے آن لائن سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ہمیں پتہ چلا ہے کہ جمعہ کی شام کو ملک بھر سے متعدد آئل اور گیس کے کنوؤں کے چوکیداروں کو نوکریوں سے نکال دیا گیا ہے لیکن ابھی تک کی اطلاعات کے مطابق20سے25لوگوں کو نکالا گیا ہے لیکن نکالے جانے والے چوکیدار ہم سے رابطہ کر رہے ہیں اگر او جی ڈی سی ایل سے تنخواہ لینے والے چوکیداروں کو نکالا گیا تو ہم ان کی بحالی کیلئے احتجاج کریں گے اور ان کو بحال کروائیں گے پنجاب کبیر والا سے لوگوں نے ہم سے رابطہ کیا ہے کہ وہاں سے 12لوگوں کو نکالا گیا ہے کل تک تمام تفصیلات موصول ہو جائیں گی اس کے بعد ہم حتمی فیصلے کا اعلان کریں گے ان کی بحالی کیلئے احتجاج کرنا پڑا تو ضرور کریں گے اس پر جب سیکرٹری کمپنی احمد حیات سے رابطہ کیا تو انہوں نے کہا کہ جب کسی جگہ پر آئل اور گیس کا کنواں لگایا جاتا ہے تو زمین کے مالک سے ہم کہتے ہیں کہ وہ اس کی چوکیداری کیلئے دو چوکیدار خود رکھ لے اور جن کنوائیں سے آئل اور گیس نکلنا بند ہو جائے اور کنواں بند کر دیا جائے تو ان کے چوکیدار بھی فارغ ہو جاتے ہیں لیکن اگر کہیں کنواں چل رہا ہو تو وہاں کے چوکیدار کو نکال دیا گیا تو میں اس کو دیکھ لوں گا اور اس حوالے سے تمام تفصیلات لینے کے بعد میں مزید بات کر سکتا ہوں۔

او جی ڈی سی ایل

مزید : پشاورصفحہ آخر