تھائی لینڈ کی شہزادی نے وزارت عظمیٰ کا الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تو اس کے ساتھ کیا سلوک ہوا؟ حیران کن خبر

تھائی لینڈ کی شہزادی نے وزارت عظمیٰ کا الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تو اس کے ساتھ ...
تھائی لینڈ کی شہزادی نے وزارت عظمیٰ کا الیکشن لڑنے کا اعلان کیا تو اس کے ساتھ کیا سلوک ہوا؟ حیران کن خبر

  

بنکاک (ڈیلی پاکستان آن لائن) تھائی لینڈ کے بادشاہ کی بہن اور شاہی خاندان کی سب سے بڑی چشم و چراغ شہزادی یوبولرتنا راجا کنیا سری ودھانا برناوادی کو وزارت عظمیٰ کا الیکشن لڑنے سے روک دیا گیا ۔ تھائی الیکشن کمیشن نے انہیں الیکشن کیلئے نااہل قرار دے دیا ہے۔

67 سالہ شہزادی نے کچھ روز پہلے وزارت عظمیٰ کے الیکشن میں حصہ لینے کا اعلان کیا تھا۔ انہیں تھائی رسکا چارٹ پارٹی نے اپنا امیدوار نامزد کیا تھا جس کے بعد انہوں نے مہم بھی شروع کردی تھی ۔ تھائی لینڈ میں ایسا پہلی بار ہوا تھا جب شاہی خاندان کے کسی فرد نے براہ راست سیاست میں حصہ لیا ہو۔

شہزادی کے اقدام پر ان کے چھوٹے بھائی اور تھائی لینڈ کے بادشاہ مہا وجیرا لونگ کرن نے سخت مخالفت کی تھی۔ بادشاہ نے اپنے بیان میں کہا تھا کہ شاہی خاندان کا ہر شخص سیاست سے بالاتر ہے اور انہیں سیاست سے دور رہنا چاہیے۔بادشاہ کی مخالفت کے بعد تھائی رسکا چارٹ پارٹی نے شہزادی سے نامزدگی واپس لے لی تھی ۔ آج (پیر کو) الیکشن کمیشن نے بھی شہزادی کو الیکشن کیلئے نااہل قرار دے دیا۔

واضح رہے کہ تھائی لینڈ میں 24 مارچ کو الیکشن ہوں گے۔ 2014 میں فوجی بغاوت کے 5 سال بعد تھائی لینڈ میں الیکشن ہونے جارہے ہیں۔

مزید : بین الاقوامی