نوجوان لڑکیوں کو ’روندنے‘ کے شوقین بوڑھوں کو خوش کرکے 26 سالہ لڑکی نے 50 لاکھ روپے کمالیے

نوجوان لڑکیوں کو ’روندنے‘ کے شوقین بوڑھوں کو خوش کرکے 26 سالہ لڑکی نے 50 لاکھ ...
نوجوان لڑکیوں کو ’روندنے‘ کے شوقین بوڑھوں کو خوش کرکے 26 سالہ لڑکی نے 50 لاکھ روپے کمالیے

  

میلبرن (ڈیلی پاکستان آن لائن) آسٹریلیا میں زیر تعلیم ایک طالبہ نے ان بوڑھوں کے ساتھ جنہیں نوجوان لڑکیوں کو ’روندنے‘ کا شوق ہے ، وقت گزار کر 50 لاکھ روپے کمالیے۔

نیوزی لینڈ سے تعلق رکھنے والی 26 سالہ سمانتھا آسٹریلیا کے شہر میلبرن کی موناش یونیورسٹی میں زیر تعلیم اور گزشتہ 10 برس سے آسٹریلیا میں مقیم ہے۔ سمانتھا کا کہنا ہے کہ وہ آسٹریلیا میں اپنے قیام کے دوران 1800 ڈالر ماہانہ کرایہ جبکہ فی سمسٹر 8500 سے 10 ہزار ڈالر یونیورسٹی فیس ادا کرتی ہے۔ ’ میرے لیے اتنے اخراجات اٹھانا ممکن نہیں تھا اس لیے 2 سال قبل میں نے متنازعہ ویب سائٹ ’شوگر ڈیڈیز ‘ کا رخ کیا ، اس ویب سائٹ پر بڑی عمر کے ایسے افراد موجود ہوتے ہیں جو کم عمر لڑکیوں کے ساتھ تعلق قائم کرکے انہیں روندنا اور ان پر اخراجات کرنا چاہتے ہیں‘۔

سمانتھا کا کہنا ہے کہ وہ اس ویب سائٹ کے ذریعے مختلف لوگوں کے ساتھ کچھ دن گزارتی ہے جس کے دوران نہ صرف اسے شاپنگ کا بھرپور موقع ملتا ہے بلکہ اچھی خاصی رقم بھی ہاتھ لگتی ہے۔ اس نے بتایا کہ ایک بار وہ جزائر بالی کے دورے پر گئی تو اسے 4 روز کے 8 ہزار ڈالر ادا کیے گئے جبکہ تمام اخراجات بھی اس کے شوگر ڈیڈی نے اٹھائے۔ وہ اس ویب سائٹ کے ذریعے لگ بھگ 50 سے 60 ہزار ڈالر سالانہ (تقریباً 50 لاکھ روپے پاکستانی) کمالیتی ہے۔

آسٹریلیا میں اس متنازعہ ویب سائٹ سے لگ بھگ ڈیڑھ لاکھ کے قریب طلبہ وابستہ ہیں ۔کچھ عرصہ پہلے یہ ویب سائٹ اس وقت سرخیوں کی زینت بنی تھی جب ایک لڑکی نے معروف سیاستدان کے بارے میں بتایا تھا کہ وہ اس کے ساتھ وقت گزار چکی ہے۔ لڑکی کے اس انٹرویو کے باعث مذکورہ سیاستدان کا سیاسی کیریئر ختم ہوگیا لیکن اس ویب سائٹ کی مقبولیت میں کئی گنا اضافہ ہوگیا تھا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس