احسن اقبال کے بھائی مصطفی کمال کی ضمانت میں توسیع

    احسن اقبال کے بھائی مصطفی کمال کی ضمانت میں توسیع

  



اسلام آباد(آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ کے چیف جسٹس اطہرمن اللہ اور جسٹس لبنی سلیم پرویز پر مشتمل ڈویڑن بنچ نے راولپنڈی اسلام آباد میٹرو بس پراجیکٹ کی تزئین و آرائش میں کرپشن کے الزام میں لیگی رہنما احسن اقبال کے بھائی مصطفی کمال کی ضمانت قبل ازگرفتاری میں توسیع کرتے ہوئے چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ سپریم کورٹ کا فیصلہ ہے کہ تفتیشی ایجنسی کے پاس گرفتاری کا اختیار ہے اگر چیئرمین نیب وارنٹ گرفتاری کا اختیار غلط استعمال کریں تو زیرحراست ملزم ہرجانے کا دعویٰ کر سکتا ہے۔گزشتہ روز سماعت کے دوران کہاگیاکہ مصطفی کمال کی کمپنی کو میٹرو منصوبے کو بیل بوٹوں سے خوبصورت بنانے کا ٹھیکہ دیا گیا تھا درخواست میں کہاگیاکہ نیب نے میرے بھائی احسن اقبال کو جھوٹے کیس میں گرفتار کر رکھا ہے، نیب کو مجھے گرفتار کرنے سے روکا جائے۔دوران سماعت نیب پراسکیوٹرنے کہاکہ اس کیس میں ملزم کے وارنٹ گرفتاری ہی جاری نہیں کیے گئے،ضمانت قبل از گرفتاری کی درخواست قبل از وقت ہے،اس موقع پردرخواست گزار کی جانب سے طارق محمود جہانگیری ایڈووکیٹ عدالت میں پیش ہوئے اورکہاکہ یہ یہاں بیان دے رہے ہیں، بعد میں چیئرمین نیب وارنٹ گرفتاری جاری کر دیتے ہیں،جس پر چیف جسٹس نے کہاکہ کیا یہ تفتیش میں تعاون کر رہے ہیں؟اس پر درخواست گزار وکیل نے کہاکہ تفتیش میں تعاون کر رہے ہیں، عدالت نے کیس کی سماعت 19 فروری تک ملتوی کر دی۔

ضمانت میں توسیع

مزید : پشاورصفحہ آخر