نادرا کے برطرف ملازمین کا احتجاجی مظاہرہ

  نادرا کے برطرف ملازمین کا احتجاجی مظاہرہ

  



پشاور(سٹی رپورٹر)ضم شدہ قبائلی اضلاع سے تعلق رکھنے والے نادرا کے پراجیکٹ سے نکالنے والیامیدواروں نے ملازمتوں کی بحالی کے حوالے سے پشاور پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کرتے ہوئے حکومت سے مطالبہ کیا کہ نادرا میں میرٹ پر بھرتی امیدواروں کو فوری طور پربحال کیا جائے بصورت دیگر احتجاجی تحریک شروع کرینگے۔مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈز اور بیرنز اٹھا رکھے جس پر انکے حق میں مطالبات درج تھے جبکہ نادرا ھکام کے خلاف شدید نعرہ بازی کی۔مظاہرے کی قیادت سمیع اللہ کرم ایجنسی،محمد اقبال مہہمند ایجنسی،مہناج الدین ضلع باجوڑ اور دیگر اجلاع سے امیدواروں نے کی۔اس موقع پر مطاہرین کا کہنا تھا تھا کہ ائی ڈی پی -ای ار پی (نادرا)پراجیکٹ میں بھرتی کیلئے مختلف قبائلی اضلاع سے 12ہزار امیدواروں نے درخواستیں جمع کی تھی جسمیں 450امیدواروں کو ٹیسٹ اور انٹر ویو کیلئے منتخب کیا گیا جنکے اانٹرویو 19اکتوبر 2019کو ہوا جسمیں 115امیداروں کو منتخب کر کے انہیں جوئنگ لیٹر بھی 21جنوری 2020کو دئے گئے اور نادرا ایچ ار پشاور ہیڈ آفس والوں نے بتایا کہ اگلے دو دنوں میں ٹرینگ ہوگی مگر دوسرے ہی روز فون پر اطلاع دی گئی کہ امیدواروں کی ٹرینگ موخر ہو گئی ہے جبکہ ایک ہفتہ بعد دوبارہ اطلاع دی کے ملازمت کیلئے منتخب 115امیدواروں کیملازمت ختم کر دئی گئی ہے۔انہوں نے کہا کہ نادرا والوں نے جو کیا سرا سر ظلم اور نہ انصافی ہے انہوں نے مزید کہا کہ ہمارے ٹر مینشن لیٹر بھی جار ی کرنے کیلئے ایچ ار والوں نے کہا اور ہم نے ملازمت ختم کرنے کی وجہ پوچھی تو کہا گیا کہ ہم پر شدید سیاسی دباو ہے ضم شدہ قبائلی اضلاع کے امیدواروں نے ملازمتوں پر بحالی کیلئے حکومت سے مطالبہ کیا ہے بصورت دیگر احتجاجی دھرنا دینگے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر