شہباز شریف کے ملوث ہونے کے شواہد نہیں ملے:نیب

  شہباز شریف کے ملوث ہونے کے شواہد نہیں ملے:نیب

  



لاہور(این این آئی) مسلم لیگ (ن) کے صدر شہباز شریف کے خلاف 12پلاٹوں کی غیرقانونی الاٹمنٹ کی انکوائری کے التواء کا شکار ہونے کی وجوہات چیئرمین نیب کو بھجوا دی گئیں۔ میڈیا رپورٹس میں ذرائع کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ سابق وزیر اعلی سمیت دیگر کیخلاف متعلقہ ریکارڈ دستیاب نہیں ہے، شہباز شریف کے ملوث ہونے کے تاحال ٹھوس شواہد نہیں ملے،سابق وزیراعلی پنجاب شہباز شریف کیخلاف من پسند افراد کو 12پلاٹ دینے سے متعلق انکوائری چل رہی۔چیئرمین نیب نے تحقیقات مکمل نہ ہونے کی وجوہات اور اب تک کی پیشرفت بارے تفصیلات طلب کی تھیں۔سابق وزیراعلی شہباز شریف سمیت دیگر کے خلاف جون 2000ء میں انکوائری کا آغاز کیا گیا تھا۔ایل ڈی اے نے 1978ء میں موضع نواں کوٹ کی زمین گلشن راوی سوسائٹی کیلئے حاصل کی،اس کے عوض 10مرلہ کے پلاٹ فراہم کرنا تھے،من پسند افراد کو خلاف قانون ایک کنال کے پلاٹ دئیے گئے،نیب نے تفتیش شروع کیں تو مبینہ طور پر پلاٹوں کی منسوخی کا حکم دیدیا گیا۔

غیرقانونی الاٹمنٹ

مزید : صفحہ اول