حکومت آئی ایم ایف کیساتھ معاہدے پر نظرثانی کرے:بلاول

  حکومت آئی ایم ایف کیساتھ معاہدے پر نظرثانی کرے:بلاول

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو کا کہنا ہے کہ حکومت کو معاشی صورتحال اور مہنگائی پر مکمل طور پر بات کرنا چاہئے۔ آئی ایم ایف کیساتھ معاہدے پر نظر ثانی کی جائے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے بلاول بھٹو کا کہنا تھا کہ آج پھر پارلیمان کا غلط استعمال کیا گیا، پی ایم ڈی سی کے بل پر اپوزیشن کو بات نہیں کرنے دی جا رہی، حکومت نے صدر ہاؤس کے ذریعے قانون سازی کرنا ہے تو پارلیمان کو بند کردیں۔پیپلز پارٹی کے چیئر مین کا کہنا تھا کہ سپیکر کا عہدہ صحیح طریقے سے استعمال ہونا چاہئے، حکومت زبردستی پی ایم ڈی سی کا بل پاس کروانا چاہتی ہے، بل پر تحفظات ہیں، پی ایم ڈی سی بل پر قومی اسمبلی میں سخت موقف اختیار کیا گیا۔نیشنل ایشو اور مہنگائی پر قومی اسمبلی میں بحث کروانا ہوگی۔بلاول بھٹو کا مزید کہنا تھا کہ حکومت کو معاشی صورتحال اور مہنگائی پر مکمل طور پر بات کرنا چاہئے۔ان کا کہنا تھا کہ آئی جی سندھ کلیم امام کے معاملے پر وفاق جان بوجھ کر غلط طریقہ کار استعمال کر رہا ہے، سندھ میں امن و امان کی صورتحال آئی جی کے عہدے کی وجہ سے متاثر ہورہی ہے، امید ہے وزیر اعظم عمران خان آئی جی سندھ کا معاملہ رواں ہفتے حل کرلیں گے۔انہوں نے مزید کہا تھا کہ یہ بجٹ پی ٹی آئی ایم ایف کا تھا، حکومت نے اپنے بڑے ادارے آئی ایم ایف کے حوالے کردیئے ہیں، حکومت کو چاہئے کہ وہ عوام کے بارے میں سوچیں، عوام مہنگائی بیروزگاری کی وجہ سے پس کر رہ گئے ہیں۔

بلاول بھٹو

مزید : صفحہ اول