سپریم کورٹ کا سابق ڈی جی حج راﺅ شکیل کی ملازمت سے برطرفی کی سزاکو جبری ریٹائرمنٹ میں تبدیل کرنے کا حکم

سپریم کورٹ کا سابق ڈی جی حج راﺅ شکیل کی ملازمت سے برطرفی کی سزاکو جبری ...
سپریم کورٹ کا سابق ڈی جی حج راﺅ شکیل کی ملازمت سے برطرفی کی سزاکو جبری ریٹائرمنٹ میں تبدیل کرنے کا حکم

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)سپریم کورٹ نے سابق ڈی جی حج راﺅ شکیل کی بریت کیخلاف اپیل کی سماعت کے دوران راو َشکیل کو ملازمت سے برطرفی کی سزا کو جبری ریٹائرمنٹ میں تبدیل کرنے کا حکم دیتے ہوئے ہائی کورٹ سے بریت کے خلاف حکومتی اپیل نمٹا دی۔

میڈیارپورٹس کے مطابق سپریم کورٹ میں سابق ڈی جی حج راوَ شکیل کی بریت کےخلاف اپیل پر سماعت ہوئی،چیف جسٹس گلزاراحمد کی سربراہی میں بنچ نے سماعت کی،سرکاری وکیل نے کہا کہ راوَ شکیل پر حج پالیسی میں خلاف ورزیوں کا الزام تھا،چیف جسٹس گلزاراحمد نے وکیل راﺅ شکیل سے استفسار کیاکہ راو شکیل پر الزام کیا لگا تھا؟وکیل راﺅ شکیل نے جواب دیتے ہوئے کہا کہ راوَ شکیل پر حج پالیسی میں خلاف ورزیوں کا الزام تھا، جسٹس اعجازالاحسن نے کہاکہ ادارہ جاتی انکوائری تو پہلے ہی مکمل ہوچکی تھی۔

چیف جسٹس پاکستان نے استفسار کیا کہ شوکاز نوٹس میں جو الزامات لگے اس کا جواب کیا دیا تھا؟ جسٹس سجاد علی شاہ نے کہاکہ راو َشکیل پر مکہ میں ایک حاجی سے 3500 ریال کمیشن لینے کا الزام ہے، جسٹس اعجاز الاحسن نے استفسار کیا کہ کیا ریٹائرمنٹ سے 30 دن پہلے فارغ کیا گیا؟۔

چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ جو الزامات لگے وہ کمیشن میں ثابت ہوئے، راوَ شکیل پر غفلت کا الزام ہے جبری ریٹائر کر دیں،نوکری پر بحالی کی کوئی گنجائش نہیں۔عدالت کا راو َشکیل کو ملازمت سے برطرفی کی سزا کو جبری ریٹائرمنٹ میں تبدیل کرنے کا حکم دیتے ہوئے ہائی کورٹ سے بریت کے خلاف حکومتی اپیل نمٹا دی۔

مزید : اہم خبریں /قومی /علاقائی /اسلام آباد