وہان میں پھنسے بیٹے کی راہ دیکھتا والد چل بسا لیکن آخری رابطے میں دونوں کے درمیان کیا بات چیت ہوئی ؟

وہان میں پھنسے بیٹے کی راہ دیکھتا والد چل بسا لیکن آخری رابطے میں دونوں کے ...

  



اسلام آباد( ویب ڈیسک) ووہان میں پھنسے پی ایچ ڈی کے طالب علم حسان نے پاکستان میں اپنے والد سے آخری بار جمعرات کو گفتگو کی جس میں انہوں نے اپنے بیٹے سے گزارش کی کہ وہ گھر واپس آجائے اور اگلے ہی روز حسان کے والد دل کا دورہ پڑنے سے انتقال کرگئے۔ روزنامہ جنگ کے مطابق حسان ان ایک ہزار سے زائد طالب علموں میں شامل ہیں جو ہوبئی صوبے میں پھنسے ہوئے ہیں اور انہیں حکومت کی جانب سے کہاگیا ہے کہ انہیں ابھی پاکستان نہیں لایا جا سکتا۔

والد کے انتقال کے بعد ان کے جنازے میں بھی شرکت نہ مل سکنے کے باعث حسان شدیدغم و غصے میں ہے، حسان کاکہنا ہے کہ اس وقت انکے اہلخانہ کو انکی ضروت ہے ، حسان کی والدہ کو حسان کی ضرورت ہے۔حسان کی اس غم و غصے کی صورتحال کا ہوبئی میں موجود دیگر پاکستانی طالب علم بھی اظہار کررہے ہیں۔دوسری جانب جب غیر ملکی خبررساںادارے نے وزارت خارجہ کے ترجمان سے موقف لینے کیلئے رابطہ کیاتو کوئی جواب نہیں ملا۔

مزید : علاقائی /اسلام آباد