وفاقی وزیر حماد اظہر نے مہنگائی میں اضافے کا اعتراف کرتے ہوئے بڑی وجہ بھی بتا دی

وفاقی وزیر حماد اظہر نے مہنگائی میں اضافے کا اعتراف کرتے ہوئے بڑی وجہ بھی ...
وفاقی وزیر حماد اظہر نے مہنگائی میں اضافے کا اعتراف کرتے ہوئے بڑی وجہ بھی بتا دی

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)وفاقی وزیر حماد اظہر نے اعتراف کرتے ہوئے کہاہے کہ اس میں کوئی شک نہیں ہے کہ  مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے،پیپلزپارٹی اور ن لیگ کے خسارے ہم پورے کر رہے ہیں،ہم نے جب حکومت سنبھالی تو ملک ڈیفالٹ کی طرف جا رہا تھا ،بجلی گیس کے بحرانوں کی وجہ ن لیگی دور کے غیر مستحکم منصوبے تھے ،کوئی مجبوری ہوتی ہے جس کی وجہ سے مشکل فیصلے کئے جاتے ہیں۔

قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے وفاقی وزیر حماد اظہر کا کہنا تھا کہ ہم نے جب حکومت سنبھالی تو ملک ڈیفالٹ کی طرف جا رہا تھا ،پاکستان کے فارن ایکسچینج  ریزرو ان کے آخری 17  مہینے میں آدھے رہ گئے تھے،یہی وجہ ہے کہ اِنہیں کے وزیر خزانہ کو یہ کہنا پڑا کہ پاکستان کو اب آئی ایم ایف کے پاس جانا چاہئے،ملکی معیشت کا بیڑہ  ن لیگ کے دور حکومت  میں غرق ہوا،ن لیگ کے دور میں معیشت اچھی  جا رہی تھی  تو پھر آئی ایم ایف کے پاس کیوں گئے؟مارچ 2018 میں آئی ایم ایف کی رپورٹ آئی ،ملکی خسارے ہم پورے کر رہے ہیں۔انہوں نے کہاکہ بجلی گیس کے بحرانوں کی وجہ ن لیگی دور کے غیر مستحکم منصوبے تھے ،گیس اور بجلی کے بل میں اضافہ مقبول فیصلے نہیں ہوتے،معیشت پر بات ہوتی ہے تو ہمیں احساس ہے کہ مہنگائی میں اضافہ ہوا ہے، حکومت کے لئے بجلی کے بل بڑھانے کا فیصلہ مشکل ہوتا ہے اور مشکل فیصلے کوئی بھی حکومت خوشی سے نہیں کرتی اور نہ ہی گیس اور بجلی کے بل میں اضافہ مقبول فیصلے ہوتے ہیں۔انہوں نے کہا کہ ہم نے معیشت کو آئی سی یو سے نکالا  ہے ، آج  کرنٹ اکاؤنٹ کا خسارہ آج 84 فیصد سے نیچے آ چکا ہے،کرنسی بہت زیادہ دباؤ میں تھی  لیکن پی ٹی آئی  نےروپے کو ڈی ویلیو نہیں کیا ،پاکستان6۔3 ارب ڈالر واپس کر چکا ہے، گذشتہ سال جولائی سے اب تک فارن  ریزرو میں 50 فیصد اضافہ ہوا،رواں سال دسمبر تک گردشی قرضے ختم کرنے ہیں،ایف اے ٹی ایف کے معاملے پر پیش رفت حوصلہ افزاء ہے،مجھے پورا یقین ہے کہ چینی کی قیمتوں میں بھی  مزید کمی آئے گی۔

مزید : قومی /اہم خبریں