ڈبلیو ایچ او کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی تدابیر جاری

ڈبلیو ایچ او کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی تدابیر جاری
ڈبلیو ایچ او کی جانب سے کورونا وائرس کے خلاف حفاظتی تدابیر جاری

  



بیجنگ(ڈیلی پاکستان آن لائن)نوول کورونا وائرس کے وبائی مرض پر قابو پانے کے لئے عالمی کوششیں جاری ہیں اور عالمی ادارہ صحت(بلیو ایچ او)نے بیماری سے بچنے کے لئے حفاظتی اقدامات تجویز کر دئے ہیں۔

غیر ملکی میڈیا کے مطابق عالمی ادارہ صحت  کی جانب سے جاری کی جانے والی ہدایات میں کہا گیا ہے کہ کرونا وائرس سے محفوظ رہنے کے لئے  سب سے پہلے تو بظاہر آپ کے ہاتھ گندے نظر نہ  بھی  آتے ہوں تو  پھر بھی صابن اور پانی یا پھر الکوحل سے تیار کردہ ہینڈ واش کے ذریعہ کثرت کے ساتھ ہاتھ دھونے چاہئے۔دوم، کھانسی یا چھینک آنے کی صورت میں منہ اور ناک کو کہنی یا پھر ٹشو کے ذریعے ڈھانپ لینا چاہئے۔ اس کے بعد ٹشو کو فوری ایک بند کچرا دان میں پھینک کر الکوحل سے تیار کر دہ ہینڈواش یا صابن اور پانی کے ساتھ اپنے ہاتھ دھو نے چاہئیں۔سوم، لوگوں سے کم از کم ایک میٹر کی دوری رکھیں، خاص طور پر ان لوگوں سے جو کھانس رہے ہوں، انہیں چھینکیں آرہی ہوں یا پھر بخار میں مبتلا ہوں۔چوتھا، اپنی آنکھوں، ناک اور منہ کو چھونے سے پرہیز کریں کیونکہ گندے ہاتھوں سے اپنی آنکھوں ناک اور منہ کو چھونے سے آپ وائرس کو جسم کی سطح سے اندر منتقل کرسکتے ہیں۔پانچواں، اگر آپ نے چین کے ایسے علاقے کا سفر کیا ہے جہاں وبا کی اطلاعات ہوں یا پھر آپ کا کسی ایسے شخص کے ساتھ قریبی رابطہ ہو جس نے چین کا سفر کیا ہو اور اس سے سانس کی بیماریوں کی علامات ہوں تو اپنے معالج کو آگاہ کریں۔چھٹے نمبر پر اگر آپ میں سانس کی بیماری کی ہلکی سی علامات ظاہر ہوں اور چین کا سفر نہ بھی کیا ہو تو بنیادی حفظان صحت کے اصولوں پر احتیاط سے عمل کرتے ہوئے صحت یاب ہونے تک اگر ممکن ہو سکے تو گھر تک محدود رہیں۔؎ساتواں، عمومی حفاظتی اقدامات کے طور پر مویشیوں کی منڈیوں،گیلی مارکیٹس یا جانوروں کے پیداواری مراکز جانے کے بعد حفظان صحت کے بنیادی اقدامات پر عمل کریں۔آٹھواں، بغیر پکے ہوئے یا کم پکے ہوئے گوشت کیاستعمال سے بچیں، کچے گوشت، دودھ یا جانوروں کو ہاتھ لگانے میں احتیاط کریں۔

مزید : تعلیم و صحت