انڈر 19 ورلڈکپ میں ناقص کارکردگی کے بعد بھی ہیڈ کوچ اعجاز احمد کام جاری رکھنے کے خواہاں مگر کیوں؟

انڈر 19 ورلڈکپ میں ناقص کارکردگی کے بعد بھی ہیڈ کوچ اعجاز احمد کام جاری رکھنے ...
انڈر 19 ورلڈکپ میں ناقص کارکردگی کے بعد بھی ہیڈ کوچ اعجاز احمد کام جاری رکھنے کے خواہاں مگر کیوں؟

  



لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) انٹرنیشنل کرکٹ کونسل (آئی سی سی) انڈر 19 کرکٹ ورلڈکپ میں قومی ٹیم کی ناقص کارکردگی کے باوجود ہیڈ کوچ اعجاز احمد کام جاری رکھنے کے خواہاں ہیں جنہوں نے نتائج میں بہتری کیلئے مزید وقت مانگ لیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق جونیئر ورلڈکپ کے سیمی فائنل میں بھارت کے ہاتھوں مات کھانے والے قومی انڈر 19ٹیم کے ہیڈکوچ اعجاز احمد نے قذافی سٹیڈیم میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ایونٹ کے تمام میچز جیتے اور تیسری پوزیشن حاصل کی، سیمی فائنل میں بھارت کے خلاف بڑا معرکہ تھا تاہم کھلاڑی پریشر میں آ گئے، ان کو بہت سمجھایا تھا کہ ایک عام میچ کی طرح کھیلیں لیکن ایسا نہ ہوسکا۔

ان کا کہنا تھا کہ کھلاڑیوں کی رہنمائی کرسکتا ہوں، خود پیڈ باندھ کر نہیں کھیل سکتا، بنگلہ دیش کیخلاف میچ بارش کی نذرنہ ہوتا تو سیمی فائنل میں نیوزی لینڈ سے مقابلہ ہوتا،حیدر اور روحیل نذیر میری توقعات کے مطابق پرفارمنس نہیں دے سکے، ایسا کرکٹ میں ہوجاتا ہے لیکن قومی انڈر 19 ٹیم درست سمت میں گامزن ہے جس کا اندازہ اس بات سے لگایا جا سکتا ہے کہ میری کوچنگ میں ٹیم گزشتہ 6 ماہ میں صرف ایک میچ ہاری ہے۔

اعجاز احمد نے کہا کہ خامیاں نظر میں ہیں اور یہ بھی معلوم ہے کہ ٹیم کو کہاں لے کر جانا ہے تاہم اس کیلئے مجھے کچھ وقت دینا ہو گا، شعیب ملک اور محمد حفیظ کی جگہ قاسم اکرم اور حارث قومی ٹیم میں شامل ہوسکتے ہیں، پی سی بی سے 4 ماہ کے کیمپ کی درخواست کی ہے،غیرملکی کنڈیشنز سے ہم آہنگی کیلئے تسلسل کیساتھ غیر ملکی ٹورز کا بھی اہتمام کرنا ہوگا۔

مزید : کھیل