’حکومت مہنگائی ، بیروزگاری کی وجہ سے گرنی چاہیے، کسی سازش یا ڈیل سے حکومت گرائی گئی تو حمایت نہیں کریں گے‘ خواجہ آصف نے واضح پیغام دے دیا

’حکومت مہنگائی ، بیروزگاری کی وجہ سے گرنی چاہیے، کسی سازش یا ڈیل سے حکومت ...
’حکومت مہنگائی ، بیروزگاری کی وجہ سے گرنی چاہیے، کسی سازش یا ڈیل سے حکومت گرائی گئی تو حمایت نہیں کریں گے‘ خواجہ آصف نے واضح پیغام دے دیا

  



اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور سابق وزیر دفاع خواجہ محمد  آصف نے کہا ہے کہ عمران خان لوگوں سے تو چندہ جمع کرتے ہیں لیکن خود نہیں دیتے، ہم انتظار کریں گے کہ یہ حکومت اپنی بدعنوانی کے نتیجے میں انجام تک پہنچے تاہم اگر تبدیلی آتی ہے تو ہم کسی سازش کا حصہ نہیں بنیں گے، اپوزیشن نے حکومت کا کچھ نہیں بگاڑا لیکن حکومت کا پہلوان اپنے ہی بوجھ سے گِر رہا ہے۔

قومی اسمبلی  میں خطاب کرتے ہوئے سینئر ن لیگی رہنما خواجہ محمد آصف نے کہا کہ ملک کو آٹا اور چینی مافیا کی پناہ گاہ بنا دیا گیا ہے، مہنگائی پر بحث ہے اور وزرا کے سارے بینچ خالی ہیں،ملک میں مہنگائی کئی گنا بڑھ گئی ہے اور پاکستانی اس وقت سب سے زیادہ جو مصیبت جھیل رہے ہیں وہ ملک میں قحط کی صورتحال ہے،  وفاقی تحقیقاتی ادارے (ایف آئی آے) نے چینی بحران پر رپورٹ جمع کرائی ہے اور میری اطلاعات کے مطابق ایسے لوگوں کے نام رپورٹ میں دیے گئے ہیں جن کی وجہ سے چینی بحران پیدا ہوا،رپورٹ  میں اُن لوگوں کے نام آتے ہیں جو حکومت کو اقتدار میں لے کر آئے، آٹا اور چینی بحران سے فائدہ اٹھانے والے موجودہ حکومت کے کفیل ہیں۔انہوں نے کہا کہ کاش وزیراعظم کے فرمودات سکرین پر چلا کر دکھائے جاتے، وہ کہتے تھے کہ جب مہنگائی ہو اور ٹیکس بڑھیں تو  تب سمجھ لیں کرپشن ہو رہی ہے، 2014 میں عمران خان نے کہا تھا کہ بجلی کی قیمت 50 فیصد کم ہو سکتی ہے، اب بجلی کی قیمت بھی بڑھ گئی ہے اور کرپشن بھی بڑھ گئی ہے۔

 وزیر اعظم جس کو چپڑاسی رکھنا گوارا نہیں کرتے تھے اسے وزیر بنا دیا اور جس کو پنجاب کا سب سے بڑا ڈاکو کہتے تھے اسے سپیکر پنجاب اسمبلی بنا دیا،کل پوری حکومتی جماعت سپیکر پنجاب اسمبلی کی چوکھٹ پر سجدہ ریز تھی کیونکہ جب اقتدار ڈولتا ہے تو ایسے ہی چوکھٹوں پر سجدہ ریز ہونا پڑتا ہے۔انہوں نے کہا  کہ  عمران خان لوگوں سے تو چندہ جمع کرتے ہیں لیکن خود نہیں دیتے، ہم انتظار کریں گے کہ یہ حکومت اپنی بدعنوانی کے نتیجے میں انجام تک پہنچے تاہم حکومت کی تبدیلی میں آئینی تقاضے پورے کیے جائیں،  ہم نہ کوئی سازش کریں گے اورنہ ہی ڈیل کریں گے،اگر تبدیلی آتی ہے تو کسی سازش کا حصہ نہیں بنیں گے۔انہوں نے کہا کہ یہ حکمران خود اپنے دشمن ہیں، آٹے اور چینی کا بحران پیدا کرنے والے حکومت میں بیٹھے ہیں، حکومت نے ملک کو چینی اور آٹا مافیا کی پناہ گاہیں بنادیا ہے،سٹاک مارکیٹ میں ایک دن میں 143 ارب روپے کا نقصان ہوا۔

مزید : قومی