مسمی انفلوئنزا سے بچنے کے لئے ہر سال ویکسینیشن کرائی جائے : پروفیسر غیاث النبی ؐ طیب

مسمی انفلوئنزا سے بچنے کے لئے ہر سال ویکسینیشن کرائی جائے : پروفیسر غیاث ...

لاہور(جنرل رپورٹر) موسمی انفلوئنز ا(ایچ ون این ون )سے بچاو ،حفاظتی تدابیر اور بر وقت علاج معالجے کے بارے آگاہی دینے کے لیے لاہور جنرل ہسپتال میں سیمینار کا انعقاد ہوا، جس کے مہمان خصوصی پرنسپل پوسٹ گریجویٹ میڈیکل انسٹیٹیوٹ پروفیسر غیاث النبی طیب تھے جبکہ مختلف شعبوں کے پروفیسر صاحبان اور طبی ماہرین نے انفلوئنزا کی وبا کے بارے میں لیکچرز دیئے ۔ پروفیسر خالد وحید ، ڈائریکٹر ریسرچ غزالہ روبی اور ڈاکٹر رضی رضوی نے اس مرض کے حوالے سے تفصیلی روشنی ڈالی۔پرنسپل پی جی ایم آئی نے کہا کہ ہر زکام انفلوئنزا نہیں ہو تا لہذا مریضوں کی جلد اور درست تشخیص اہم ہے تاکہ ان کا صحیح سمت میں علاج شروع ہو سکے۔ ایل جی ایچ کے ان ڈاکٹرز اور طبی عملے کے لیے ویکسین کا بندوبست کیا گیا ہے جنہیں انفلوئنزا کے مریضوں کے لیے طبی خدمات سرانجام دینا ہیں، اسی طرح انفلوئنزا کے مریضوں کے لیے علیحدہ انتظامات بھی کر لیے گئے ہیں اور جنرل ہسپتال میں پنجاب حکومت کی ہدایات کے مطابق زیادہ سے زیادہ طبی سہولیات موجود ہونگی ۔ پروفیسر غیاث النبی طیب نے کہا کہ ہسپتال کے ڈاکٹروں اور عملے کو الرٹ کر دیا گیا ہے اور انشاء اللہ صورتحال کی وہ خود مانیڑننگ کریں گے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہو ئے پروفیسر غیاث النبی کا کہنا تھا کہ سیزنل انفلوائنزا سے بچنے کیلئے ہر سال ماہ اکتوبر میں ویکسینیشن کروانی چاہئے کیونکہ یہ ویکسینشن 15روز بعد اپنا اثر دکھانا شروع کرتی ہے ۔ نے کہا اس وائرس سے متاثرہ شخص وقفے وقفے سے صابن سے ہاتھ دھوئے تاکہ یہ وائرس خاندان کے دوسرے افراد میں منتقل نہ ہو سکے ۔ اس موقع پر خطاب کرتے ہوئے پروفیسر خالد وحید ، ڈائریکٹر ریسرچ غزالہ روبی اور ڈاکٹر رضی رضوی نے کہا کہ اس میں کوئی شک نہیں کہ انفلوئنزا ایک وبائی مرض ہے جو ایک دوسرے کو کھانے کی اشیاء ، چھینکنے اور چھونے سے لگ سکتی ہے۔انہوں نے کہا کہ خاص طور پر یہ وائرس ان لوگوں کیلئے خطرناک ثابت ہو سکتا ہے جن کی قوت مدافعت کمزور ہو ۔

انہوں نے لوگوں سے کہا کہ وہ گھبرانے کی بجائے فوری طور پر ہسپتال سے رابطہ کریں اور گھر کے دیگر افراد کے لیے احتیاطی تدابیر کو یقینی بنائیں۔ڈاکٹرز ، نرسز ، پیرا میڈکس بھی اس سیمینار میں موجود تھے جبکہ اس موقع پر انفلوئنزا کے بارے میں مختلف سوالات کے جوابات بھی دئیے گئے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...