اورنج ٹرین کا 81فیصد کام مکمل ، بو گیو ں ن کے مزید 2سیٹ لاہور روانہ


لاہور(نمائندہ پاکستان) وزیر اعلی پنجاب کے مشیر اور سٹیرنگ کمیٹی کے چیئرمین خواجہ احمد حسان نے بتایا ہے کہ چوبرجی کے قریب میٹرو ٹرین منصوبے سے متاثر ہونے والی مسجد کی متبادل جگہ پر تعمیر کے لئے بہاولپور روڈ پر پی ایس او پٹرول پمپ کے عقب میں نجی اراضی کا انتخاب کر لیا گیا ہے اور نمازیوں کے مشورے سے بہت جلد اس انتظام کو حتمی شکل دے دی جائے گی ۔ انہوں نے واضح کیا کہ پنجاب یونیورسٹی کی ایک انچ اراضی بھی کسی دوسرے کو نہیں دی جارہی تھی۔ یونیورسٹی انتظامیہ سے زمین کو اپنی ہی ملکیت میں رکھتے ہوئے یہاں نمازیوں کی سہولت کے لئے مسجد تعمیر کرنے کی درخواست کی تھی۔ لاہور اورنج لائن میٹرو ٹرین منصوبے کا 81فیصد تعمیراتی اور 35فیصد الیکٹریکل و مکینکل ورکس مکمل کر لیا گیا ہے ۔ سی آر نو رنکو کی 12ٹیمیں ٹرین کی پٹری بچھانے کا کام کر رہی ہیں ‘ پیکیج ٹو پر بھی یہ کام شروع کر دیا گیا ہے اور ابھی تک پٹری بچھانے کے لئے بھی 43فیصد کام مکمل کر لیا گیا ہے ۔ منصوبے پر ’’شہباز سپیڈ‘‘سے کام جاری ہے۔میٹروٹرین کے لئے بوگیوں کے دو مزید سیٹ گزشتہ روز کراچی سے لاہور روانہ کر دیئے گئے ہیں جو آئندہ ہفتے یہاں پہنچیں گے‘ چار مزید ٹرین سیٹ چین سے کراچی پہنچ چکے ہیں جنہیں جلد لاہور بھجوادیا جائے گا۔ ابھی تک پانچ ٹرین سیٹ لاہور پہنچ چکے ہیں گزشتہ روز اورنج لائن منصوبے پر پیش رفت کا جائزہ لینے کے سلسلے میں منعقدہ اجلاس کی صدارت کر تے ہوئے خواجہ احمد حسان نے ہدایت کی منصوبے پر عمل در آمد کے دوران شہریوں کی سہولت کا خیال رکھا جائے۔ جی پی او چوک بند ہونے کے باعث شہریوں کی متبادل راستوں کی طرف رہنمائی کے لئے موزوں مقامات پر بورڈ ز نصب کئے جائیں ۔ٹریفک رواں دواں رکھنے کے لئے ملحقہ سڑکوں سے ملبہ اٹھایا جائے ‘ تجاوزات کا خاتمہ کیا جائے‘ نکاسی آب کو یقینی بنایا جائے اور ان سڑکوں کا ضروری پیچ ورک کیا جائے ۔ ضرورت پڑنے پر بعض سڑکوں کو عارضی طور پر ون وے ٹریفک کے لئے استعمال کرنے اور بعض مقامات پر گاڑیوں کی پارکنگ ممنوع قرار دینے کی تجاویز پر غور کیا جائے ۔اجلاس کو بتایا گیا کہ مزار بابا موج دریا کی مسجد کی تعمیر نو انتظامی کمیٹی کی تجویز کردہ جگہ اور نقشہ کے مطابق کی جائے گی۔ مسجد ‘لنگر خانہ اور سماع ہال کی تعمیر کے اخراجات ایل ڈی اے برداشت کرے گا۔مزار کی زمین ایکوائر نہیں کی جائے گی بلکہ اورنج ٹرین کے لئے ٹنل کی تعمیر کے بعد یہ جگہ مزار کو ہی استعمال کے لئے دے دی جائے گی ۔ اجلاس کو بتایا گیا کہ مجموعی طور پرمنصوبے کا 81فیصد تعمیراتی کام مکمل ہو چکا ہے ۔ڈیرہ گجراں سے چوبرجی تک پیکیج ون کا 89فیصد‘ چوبرجی سے علی ٹاؤن تک پیکیج ٹو کا70 فیصد ‘پیکیج تھری ڈپو کا 84فیصد جبکہ پیکیج فور سٹیبلینگ یارڈ کی تعمیر کا 85فیصد کام مکمل کیا جا چکا ہے ۔اس کے علاوہ منصوبے کا 35 فیصد الیکٹریکل ومکینیکل ورکس بھی مکمل کر لیا گیا ہے ۔ محکمہ سوئی گیس نے منصوبے کے حوالے سے اپنا تمام کام مکمل کر لیا ہے ۔ اجلاس میں ایم پی اے چودھری شہباز ‘چیف انجینئر ایل ڈی اے اسرار سعید ‘ چیف انجینئر ٹیپا سیف الرحمن اور لیسکو‘پی ٹی سی ایل ‘سوئی گیس ‘ ریلوے‘ ٹریفک پولیس ‘سول ڈیفنس‘ریسکیو1122 اور دیگر متعلقہ محکموں کے اعلی افسران کے علاوہ منصوبے کے چینی کنٹریکٹر سی آر نورنکو اور چائنہ انجینئر نگ کنسلٹنس کے نمائندوں اور مقامی کنٹریکٹرز نے شرکت کی ۔
اورنج ٹرین

مزید : میٹروپولیٹن 1

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...