سندھ میں تعلیم کے بجٹ کا بڑا حصہ اساتذہ کی تنخواہوں کی نذر


کراچی ( اسٹاف رپورٹر) محکمہ تعلیم سندھ کی رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے کہ سندھ کے اسکولوں میں اساتذہ کی تعداد بڑھ گئی ہے جبکہ طلبا و طالبات کی تعداد میں تیزی سے کمی آئی ہے۔تفصیلات کے مطابق محکمہ تعلیم سندھ کی رپورٹ میں انکشاف کیا گیا ہے کہ سندھ کے اسکولوں میں اساتذہ کی تعداد 14 لاکھ سے زائد ہوگئی ہے جبکہ 1 لاکھ سے زائد طالبات نے تعلیم سے منہ موڑلیا۔رپورٹ کے مطابق طلبہ و طالبات کی تعداد میں تیزی سے کمی اور اساتذہ کی تعداد میں اضافہ ہو رہا ہے جس کے باعث تعلیم کے بجٹ کا بڑا حصہ تنخواہوں کی ادائیگی میں خرچ ہوجاتا ہے۔رپورٹ میں کہا گیا کہ 6 سال میں 5 ہزار اسکول بند ہوگئے جبکہ 75 فیصد اسکول کھیل کے میدان اور 98 فیصد لیبارٹریز سے محروم ہیں۔ 23 ہزار اسکولز میں بجلی میسر نہیں۔محکمہ تعلیم کی رپورٹ میں تعلیمی تنزلی کی وجہ سیاسی مداخلت اور ناتجربہ کار افسران تعلیم کو قرار دیا گیا ہے۔

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...