سندھ اسمبلی کا اجلاس احمد پتافی کے انتقال کی وجہ سے ملتوی


کراچی (اسٹاف رپورٹر)سندھ اسمبلی کے اجلاس کی کارروائی پیپلزپارٹی کے معزز رکن احمد علی خان پتافی کے انتقال کی وجہ سے جمعرات کے روز تک ملتوی کردی گئی سندھ اسمبلی کا اجلاس اسپیکر آگا سراج درانی کی صدارت میں شروع ہوا اجلاس میں پیپلزپارٹی کے رکن سندھ اسمبلی مرحوم احمد علی خان پتافی، کوئٹہ بم دھماکے کے شہدا، زبیدہ آپا، رقیہ خانم، ریٹائرڈ ایئر مارشل اصغر خان ، ایم پی اے ہمایوں خان کی والدہ کے ایصال ثواب کے لئے فاتحہ خوانی کی گئی جبکہ مٹھی میں دو اقلیتی افراد کی ہلاکت کے خلاف ایوان میں خاموشی اختیار کی گئی ایوان میں قصور میں معصوم بچی زینب کی زیادتی کے بعد ہلاکت پر واقعے میں ملوث وحشی درندوں کی گرفتاری اور قرار واقعی سزا دینے کا مطالبہ کیا گیا اجلاس میں محکمہ اوقاف سے متعلق وقفہ سوالات تھے سندھ پبلک پروکیورمنٹ ترمیمی بل کا تعارف، جبکہ پی ٹی آئی کے پارلیمانی لیڈر خرم شیر زمان کی کراچی میں اسٹریٹ ریسنگ کے حوالے سے تحریک التوا اور پیپلزپارٹی کی رکن اسمبلی شہناز انصاری کی نوشہرو فیروز پولیس کے خلاف تحریک استحقاق ایجنڈے میں شامل تھی تاہم ایوان کی کارروائی تلاوت کلام پاک اور فاتحہ خوانی کے بعد ملتوی کردی گئی پیپلز پارٹی کے گھوٹکی سے رکن سندھ اسمبلی سردار احمد علی پتافی وفات پاگئے تھے اور پارلیمانی روایات کے مطابق اگر کوئی موجودہ رکن انتقال کرجائے تو اس کے احترام اور یاد میں ایوان میں پہلے روز کی کارروائی ملتوی کردی جاتی ہے۔ اجلاس میں پیپلزپارٹی کے مرحوم رکن اسمبلی احمد علی خان پتافی کی خدمات پر انہیں خراج عقیدت کی قرارداد سندھ اسمبلی نے متفقہ منظور کرلی قرارداد پارلیمانی امور کے وزیر نثار کھوڑو نے پیش کی۔

مزید : کراچی صفحہ اول

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...