آئین میں ٹیکنوکریٹ حکومت کی کوئی گنجائش نہیں، کسی بھی غیر جمہوری عمل حصہ نہیں بنیں گے: آصف زرداری

آئین میں ٹیکنوکریٹ حکومت کی کوئی گنجائش نہیں، کسی بھی غیر جمہوری عمل حصہ ...
آئین میں ٹیکنوکریٹ حکومت کی کوئی گنجائش نہیں، کسی بھی غیر جمہوری عمل حصہ نہیں بنیں گے: آصف زرداری

نواب شاہ (ڈیلی پاکستان آن لائن) سابق صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ آئین میں ٹیکنو کریٹ حکومت کی کوئی گنجائش نہیں ہے ، عام انتخابات بروقت ہونے چاہیں،پیپلز پارٹی کوئی غیر آئینی قدم نہیں اٹھائے گی اور نہ کسی غیر جمہوری عمل کی حمایت کرے گی۔

نواب شاہ میں میڈیا سے بات کرتے ہوئے پیپلز پارٹی کے شریک چیئرمین آصف علی زرداری نے کہا کہ پیپلز پارٹی 73 کے آئین کی بانی جماعت ہے وہ کسی بھی غیر جمہوری عمل کی حمایت نہیں کرے گی، آئین میں ٹیکنو کریٹس حکومت کا کوئی ذکر نہیں اور نہ کوئی غیر آئینی اقدام اٹھایا جائے گا،ہماری خواہش ہے کہ حکومت اپنی مدت پوری کرے مگر حکومتی بی ٹیم کی کوتاہیوں سے یہ حکومت چلتی نظرنہیں آرہی۔ میرے خیال میں سینیٹ الیکشن وقت پر ہوجائے گا جب کہ عام انتخابات میں اگر پارٹی نے ٹکٹ دیا تو نواب شاہ سے الیکشن لڑوں گا۔زینب کے قتل پر آصف زرداری نے کہا کہ قصور میں معصوم بچی کا قتل شہباز حکومت کی ناکامی ہے،پنجاب حکومت عوام کو تحفظ دینے میں ناکام ہوچکی ہے،وزیراعلیٰ پنجاب رات کےاندھیرے میں تعزیت کرنے قصورپہنچے ۔ انہوں نے مطالبہ کیا کہ قصور واقعے میں ملوث تمام ملزمان کو فی الفور گرفتار کیا جائے۔

الطاف حسین کے بارے میں پوچھے گئے سوال کے جواب میں سابق صدر کا کہنا تھا کہ وہ آج کل ٹی وی پر نہیں سوشل میڈیا پر آتے ہیں ہماری عمر سوشل میڈیا والی نہیں ہے، مستقبل میں پی ایس پی اور ایم کیو ایم پاکستان الطاف حسین کے ساتھ مل بھی سکتے ہیں اور نہیں بھی۔ سانحہ ماڈل ٹاﺅن کے حوالے سے طاہر القادری کے ہم خیال ہیں اور ان کے احتجاج میں ساتھ ہوں گے۔

مزید : قومی /سیاست

لائیو ٹی وی نشریات دیکھنے کے لیے ویب سائٹ پر ”لائیو ٹی وی “ کے آپشن یا یہاں کلک کریں۔


loading...