چیئرمین زراعت سٹینڈنگ کمیٹی برطرفی کے خلاف رٹ سماعت کیلئے منظور

چیئرمین زراعت سٹینڈنگ کمیٹی برطرفی کے خلاف رٹ سماعت کیلئے منظور

پشاور(نیوزرپورٹر)پشاورہائی کورٹ کے چیف جسٹس وقار احمد سیٹھ اورجسٹس عبدالشکور پرمشتمل دورکنی بنچ نے سپیکر خیبر پختونخوا اسمبلی کی جانب سے رکن صوبائی اسمبلی خوشدل خان کی بطورچیئرمین زراعت سٹینڈنگ کمیٹی برطرفی کے خلاف رٹ سماعت کیلئے منظورکرلی اورنئے چیئرمین ارباب جہانداد کو آئندہ سماعت تک کمیٹی کااجلاس طلب کرنے سے روک لیاہے عدالت عالیہ کے فاضل بنچ نے یہ عبوری احکامات گذشتہ روز درخواست گذارخوشدل خان ایڈوکیٹ کی وساطت سے دائررٹ پرجاری کئے اس موقع پر عدالت کو بتایاگیاکہ درخواست گذارکاتعلق عوامی نیشنل پارٹی سے 6 دسمبر2018ء کو سپیکرصوبائی اسمبلی نے درخواست گذار کو لائیوسٹاک ٗ زراعت ٗ فشریزاورکوآپریٹو سے متعلق سٹینڈنگ کمیٹی کاچیئرمین مقررکیااورحکومتی ارکان کمیٹی کے اراکین مقررہوئے جس پر یکم جنوری2019ء کو درخواست گذار نے کمیٹی کااجلاس طلب کیاجس میں ایجنڈا رکھاگیاکہ کمیٹی کوبریفنگ دی جائے تاہم 7 جنوری 2019ء کو سپیکرصوبائی اسمبلی نے ایک دوسرانوٹی فکیشن جاری کیاجس میں پاکستان تحریک انصاف کے رکن صوبائی اسمبلی ارباب جہانداد کو چیئرمین نامزد کرکے درخواست گذار کو بطورچیئرمین برطرف کردیا گیا اور اس حوالے سے کوئی وجہ بھی نہیں بتائی گئی جبکہ سپیکرایک مرتبہ جب نوٹی فکیشن جاری کردے تو اس کی واپسی کااختیار نہیں ہے جبکہ نوٹی فکیشن میں برطرفی کاکوئی جوازبھی نہیں پیش کیاگیاہے اس موقع پر ایڈوکیٹ جنرل عبداللطیف یوسفزئی عدالت میں پیش ہوئے اورمہلت طلب کی جس پر عدالت عالیہ نے 22جنوری تک سماعت ملتوی کرتے ہوئے ارباب جہاندادکوکمیٹی کااجلاس طلب کرنے سے روک دیاجبکہ سپیکراسمبلی سے بھی جواب مانگ لیا۔

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...