5ہزار سے زائد لینے والے سکولوں کو 20فیصد فیس کم کرنی پڑے گی : چیف جسٹس ،راؤ انوار ناکام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست مسترد

5ہزار سے زائد لینے والے سکولوں کو 20فیصد فیس کم کرنی پڑے گی : چیف جسٹس ،راؤ ...

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک ،آئی این پی ) سپریم کورٹ کاایک بار پھر 5 ہزار روپے سے زائد فیس لینے والوں اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کا حکم ،سپریم کورٹ نے را ؤ انوار کا نام ای سی ایل سے نکالنے کی درخواست مسترد کردی، آئی ٹی یونیورسٹی کیس میں سپریم کورٹ کا سی ڈی اے کو اوورسیز پاکستانی کی رقم واپس کرنے کا حکم، اصغر خان کیس بند نہیں ہونا چاہیے: لواحقین کا عدالت عظمیٰ میں جواب۔تفصیلات کے مطابقسپریم کورٹ نے ایک بار پھر 5 ہزار روپے سے زائد فیس لینے والوں اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کا حکم دیا ہے اور ساتھ ہی چیف جسٹس نے کہا ہے یہ حکم تمام اسکولوں کے لیے ہے۔ رکنی بینچ نے نجی اسکولوں کی اضافی فیسوں سے متعلق کیس کی سماعت کی جس سلسلے میں پرائیوٹ اسکولز ایسوسی ایشن کے صدر، سپریم کورٹ بار ایسوسی ایشن کے صدر سمیت سیکریٹری لاء4 اینڈ جسٹس کمیشن عدالت میں پیش ہوئے۔عدالت نے ایک بار پھر 5 ہزار روپے ماہانہ سے زائد فیس والے نجی اسکولوں کو فیس میں 20 فیصد کمی کرنے کا حکم دیا اور ساتھ ہی چیف جسٹس پاکستان نے کہا کہ یہ حکم تمام اسکولوں کے لیے ہے۔امان اللہ کنرانی نے عدالت کو بتایا کہ فیسوں میں کمی کے ساتھ ایک اسکول نے بچوں سے سوتیلوں جیسا سلوک شروع کر دیا، بچوں کیساتھ ناروا سلوک ہوا ہے، متعد اسکولوں نے فیس کم کی ہے لیکن عدالتی فیصلے کے بعد اسکول میں بچوں کو حاصل سہولیات میں بھی کمی کرنا شروع کردی گئی ہے۔جسٹس ثاقب نثار نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اسکول فیسوں میں کمی کے بعد ری ایکشن دکھا رہے ہیں، یہ اسکول عدالت کے فیصلے کا مذاق اڑا رہے ہیں، عدالتی فیصلے کی تضحیک کی جارہی ہے، ہم ان اقدامات کو برداشت نہیں کریں گے، ان لوگوں کو پکڑیں گے اور ان کا ٹرائل کریں گے، ہمارا ا?رڈر بہت واضح ہے، پانچ ہزار روپے تک فیس لینے والوں کے لیے ایسا نہیں ہوگا لیکن جن کی فیسیں اس سے زیادہ ہیں ان کو کم کرنا پڑیں گی اور چھٹیوں کی فیس بھی واپس کرنا پڑے گی۔چیف جسٹس نے ایف آئی اے کو حکم دیا کہ ایسے تمام اسکولوں کا فرانزک آڈٹ کریں اور معلوم کریں کہ کتنے اسکول ہیں جنہوں نے چھٹیوں کی فیس واپس نہیں کی۔سیکریٹری لاء4 اینڈ جسٹس کمیشن نے عدالت کو بتایا کہ کچھ اسکول کہہ رہے ہیں 5 ہزار پر فیس کم نہیں کریں گے، پانچ ہزار سے اوپر جتنی فیس ہے اس پر کمی کررہے ہیں۔ علاوہ ازیں سپریم کورٹ نے نقیب اللہ قتل کیس کے مرکزی ملزم سابق سینئر سپرنٹنڈنٹ پولیس ( راؤ انوار کا نام ایگزٹ کنٹرول لسٹ (ای سی ایل) سے نکالنے کی درخواست مسترد کردی،چیف جسٹس نے ریمارکس دیئے کہ کیا را ؤانوار ریاست کے لیے اتنا اہم ہے کہ اس کے ساتھ اتنا خصوصی سلوک ہو رہا ہے، را ؤانوار باہر جانے کی بات کر رہا ہے، اس کا پاسپورٹ ضبط ہونا چاہیے، ایک جوان بچہ نقیب اللہ مار دیا گیا، راؤ انوار یہاں سے کمایا ہوا پیسہ باہر منتقل کرنا چاہتا ہوگا،کمرہ عدالت میں موجود مقتول نقیب اللہ کے والد نے راؤ انوار کی درخواست مسترد ہونے پر عدالت کا شکریہ ادا کیا۔ دری اثنا سپریم کورٹ نے اسلام آباد میں آئی ٹی یونیورسٹی کے قیام سے متعلق کیس میں سی ڈی اے کو بیرون ملک مقیم پاکستانی کو رقم ادا کرنے کا حکم دے دیا،چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ بیرون ملک مقیم پاکستانی ملک سے بہت پیارکرتے ہیں، ڈیم فنڈز کے لیے گھروں سے باہرآکرانہوں نے پیسے دیے، سی ڈی اے نے یونیورسٹی کے قیام کے لیے بیرون ملک مقیم پاکستانی سے معاہدہ کیا،، سی ڈی اے نے یونیورسٹی کے لیے اراضی لیز پر دینی تھی جو کہ نہیں دی، ایک مہینے میں پوری رقم ڈالرمیں واپس کریں، ڈالرمیں لیے تو ڈالرمیں واپس کریں۔مرحوم اصغر خان کے لواحقین نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کراتے ہوئے درخواست کی ہے کہ اصغر خان کیس بند نہیں ہونا چاہیے۔اصغر خان کے لواحقین کی جانب سے ان کے وکیل سلمان اکرم راجا نے سپریم کورٹ میں جواب جمع کرادیا۔اصغر خان کی اہلیہ، صاحبزادے علی اصغر، نسرین خٹک اور شیریں اعوان نے مشترکہ جواب میں کہا ہے کہ ایف آء اے کی اصغر خان کیس کی انکوائری ختم کرنے کی سفارش کو مسترد کرتے ہیں۔اصغر خان کے لواحقین نے کہا کہ اصغر خان کیس میں ایف آئی اے انکوائری ختم نہیں ہونی چاہیے، اصغر خان کا خاندان کیس کا حتمی انجام چاہتا ہے۔

چیف جسٹس

مزید : صفحہ اول


loading...