میرے خلاف نیب میں کوئی انکوائری نہیں چل رہی، سیکرٹری سکولز ایجوکیشن

میرے خلاف نیب میں کوئی انکوائری نہیں چل رہی، سیکرٹری سکولز ایجوکیشن

لاہور( لیڈی رپورٹر )صوبائی سیکرٹری سکولز ایجوکیشن ظفر اقبال نے پنجاب اسمبلی کے احاطے میں ذرائع ابلاغ کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے واضح کیا ہے کہ ان کے خلاف کوئی انکوائری نہیں چل رہی اور نہ ہی ان کے علم میں ایسی کوئی بات ہے۔ میں پنجاب سے تیرہ ،چودہ سال باہر رہا ہوں اور سیاسی بنیادوں پر مجھے پنجاب میں پوسٹنگ نہیں دی گئی۔انہوں نے کہاکہ آج کل جو میرے خلاف خبریں لگ رہی ہیں وہ میڈیا مینجمنٹ تھی اور وہ بے بنیاد خبریں تھیں۔انہوں نے واضح کیا کہ میری تمام پراپرٹیز ڈکلیئرڈ ہیں۔

جو تحائف ہیں وہ بھی ڈکلیئرڈ ہیں اور جو میں نے جو جائیدادیں ایکوائرکی ہیں وہ بھی ڈکلیئرڈ ہیں۔انہوں نے کہا کہ مجھے کوئی نوٹس نہیں ملا۔نیب مجھے جب بلائے گا تو میں ضرور جاؤں گا۔

رٹہ سسٹم کی موجودگی میں طلبا کے ذہنوں میں نئی سوچ کا پیدا ہونا نہایت مشکل امر ہے۔

ڈاکٹر رؤفِ اعظم نے مزید کہا کہ اصل علم وہ ہے جس کو استعمال کرکے ہم اپنی زندگی کو آسان بنا سکیں، اپنے مسائل احسن انداز سے حل کر سکیں۔ انہوں نے اس یقین کا اظہار کیا کہ ایمان داری، لگن اور مسلسل محنت کے ذریعے ہم اپنے معیار تعلیم کو بہتر بنا سکتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ نامساعد مالی حالات کے باوجود وطن عزیز کی بے شمار جامعات کئی حوالوں سے علم کے فروغ کے لئے نہایت شاندار انداز میں کام کر رہی ہیں، جس پر ہمیں فخر محسوس کرنا چاہیے تاہم اپنی جامعات کو عالمی معیار تک لے جانے کے لئے ہم سب کو مل جل کر کام کرنا ہو گا۔سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے ورچوئل یونیورسٹی کے ریکٹر ڈاکٹر نوید اے ملک نے کہا کہ ایک اچھے استاد کے لئے ضروری ہے کہ اسے ابلاغ میں بھی مہارت حاصل ہو، وہ اچھا لکھ سکتا ہو تاکہ وہ اپنے علم اور اپنی تحقیق سے دنیا کو مستفید کر سکے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے ہاں آبادی جس تیز رفتاری سے بڑھ رہی ہے اسی تناسب سے تعلیم کے لئے بھی اخراجات مختص کرنا ہوں گے تاکہ ہمارا نظام تعلیم بہتر ہو سکے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1


loading...