بجلی چوروں سے کوئی اور رعایت نہیں برتی جائے گی،عمر ایوب

بجلی چوروں سے کوئی اور رعایت نہیں برتی جائے گی،عمر ایوب

اسلام آباد(صباح نیوز)وفاقی وزیر توانائی عمر ایوب نے کہا ہے کہ بجلی چوروں سے کوئی اور رعایت نہیں برتی جائے گی بہت سے بجلی چور پکڑے جا چکے ہیں اور باقیوں کی پکڑ دکڑ کا سلسلہ جاری ہے ۔عوام کو چاہیے کہ وہ بجلی چوروں اور ان کی معاونت کرنے والے لائن مینوں کی نشاندہی کریں بجلی چوروں سے مک مکا کرنے والے لائن مینوں کو بھی فارغ کیا جا چکا ہے۔بجلی چوری کی روک تھام کے لیے ٹیکنالوجی کا استعمال کررہے ہیں چاہتے ہیں کہ بجلی کے پیداواری اور ترسیلاتی نظام میں بہتری لا رہے ہیں نجی شعبہ بھی اپنا کردار ادا کرے۔سرکاری ٹی وی پروگرام میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ گزشتہ ادوار میں بجلی کے ترسیلاتی نظام پر خاطرخواہ توجہ نہیں دی گئی موجودہ حکومت بجلی پیدا کرنے کے متبادل ذرائع پر توجہ مرکوز کررہی ہے 2025ء تک متبادل ذرائع سے 20 فیصد بجلی پیدا کریں گے۔2030ء تک بجلی کا پیداواری ہدف 55 ہزار میگا واٹ ہے سستی بجلی کی پیداوار کے لیے مقامی وسائل پر توجہ دے رہے ہیں چاہتے ہیں کہ بجلی کے پیداواری اور ترسیلاتی نظام میں نجی شعبہ بھی کردار ادا کرے بجلی چوری کی روک تھام کے لیے ٹیکنالوجی کا استعمال کررہے ہیں۔چوروں کے لیے کوئی رعایت نہیں چور چور ہے خواہ بڑاہو یا چھوٹا سابقہ حکومتوں کی غلط پالیسی سے ایک سال میں گردشی قرضے میں 400 ارب کا اضافہ ہوا۔انہوں نے کہا کہ بجلی کی 300 یونٹ سے کم استعمال والے صارفین کے لیے قیمتوں میں کوئی اضافہ نہیں کیا گیا انہوں نے صارفین سے کہا ہے کہ وہ چوروں کی نشاندہی کریں ہم ان کو پکڑیں گے چوروں کو پکڑ کر صارفین کو فائدہ ہے۔انہوں نے کہا کہ جن بجلی چوروں کو ہم نے پکڑا ہے ان میں فیکڑی مالکان بھی شامل ہیں جو کمپیوٹر کے ذریعے بجلی کے میٹر کو پیچھے کر دیتے تھے بجلی چوروں کے ساتھ کچھ لائن مین بھی ملے ہوئے تھے جنہیں ہم نے فی الفور نوکری سے نکال باہر کیا ہے۔

عمر ایوب

مزید : صفحہ آخر


loading...