تبدیلی کا اصل محرک اور ملک کو چلانے کیلئے کل کا حکمران نوجوان طبقہ ہے ، کامران بنگش

تبدیلی کا اصل محرک اور ملک کو چلانے کیلئے کل کا حکمران نوجوان طبقہ ہے ، ...

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیر اعلیٰ خیبر پختونخوا کے معاون خصوصی برائے سائنس و ٹیکنالوجی اور انفارمیشن ٹیکنالوجی کامران بنگش نے کہا ہے کہ تبدیلی کا اصل محرک اور ملک کو چلانے کیلئے کل کے حکمران ہمارا نوجوان طبقہ ہے۔ نو جوانوں کو فعال شہریوں کا کردار ادا کرنا چاہیے اور ان کی ہر شعبہ زندگی میں حصہ داری معاشرے کیلئے ناگزیر ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کے روز پشاور میں خیبر پختونخوا کے نوجوان طبقے کا صوبائی قانون ساز اسمبلی کیساتھ رابطہ کے عنوان سے منعقدہ سیمینار سے خطاب کے دوران کیا۔ سیمینار کا اہتمام یو این ڈی پی نے کیا تھا جس میں نوجوان اراکین اسمبلی ابراہیم خٹک ، ڈاکٹر سمیر ا شمس، فخر جہان ودیگر ، یو نیورسٹیز کے طلبہ اور دیگر متعلقہ افراد نے شرکت کی ۔ سیمینار میں طلبہ اور دیگر شرکاء نے صوبائی اسمبلی کے قانون سازوں کو نوجوان طبقے کیلئے قانون سازی اور دیگر امور میں اپنی آرا پیش کیں جبکہ اراکین اسمبلی نے نوجوانوں کی تجاویز کو متعلقہ فورمزتک پہنچانے اور ان کے حل کیلئے اقدامات اٹھانے کی یقین دہانی کرائی۔ سیمینار سے خطاب میں وزیراعلیٰ کے معاون خصوصی کا کہناتھا کہ ہمارے ملک میں نوجوان طبقہ اس ملک کی بہتری کیلئے نمایاں کردار ادا کرنے کی ایک امید ہے اور گزشتہ دو انتخابات میں جب نو جوان کھڑے ہوئے تو ملک کا سیاسی نقشہ ہی تبدیل کردیا۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے نو جوانوں کا جذبہ اس امر کی عکاسی کرتا ہے کہ انہوں نے اس ملک کو صیح ڈگر پر ڈالنا ہے۔ معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ ملک کی آبادی کا 60 فیصد جو کہ نوجوان طبقہ پر مشتمل ہے معاشرتی اور سیاسی سر گرمیوں میں بڑھ چڑھ کر حصہ لے رہی ہے تا ہم ان کو سیاسی نظام میں مزید حصہ داری فراہم کرنی چاہیے تاکہ وہ اپنا کردار ادا کریں۔انہوں نے کہا کہ نوجوانوں کو بلدیاتی نظام حکومت میں زیادہ حصہ دینا چاہیے کیونکہ اس سیڑھی میں ان کو بنیادی مسائل سے شناسائی ہوتی ہے۔ انہوں نے امید ظاہر کی کہ آنے والے بلدیاتی انتخابات میں یوتھ کو زیادہ نمائندگی ملے گی۔ معاون خصوصی نے نوجوانوں کو ہدایت کی کہ وہ فعال شہریت میں اپنا انفرادی کردار ادا کریں۔ انہوں نے یو نیورسٹیوں میں یوتھ (summits ) کے انعقاد پر زور دیا اور کہا کہ نو جوانوں کو مثبت سر گرمیوں کیلئے تیار کرکے انفرادیت سے بچانا ہے۔ معاون خصوصی کا کہنا تھا کہ ہماری حکومت نے کلین اینڈ گرین ٹیکنالوجی ایپ کا قیام عمل میں لایا ہے اور اس کا ایک مقصد یہ ہے کہ نوجوان طبقے کوصحت مند اور مثبت سر گرمیوں میں شریک بنا یا جائے۔ انہوں نے کہا کہ حکومت نے نو جوان طبقے کیلئے یوتھ کارنیوال مہم شروع کی تھی جبکہ نئی ڈیجیٹل پالیسی کے تحت 50 فیصد مواقع خواتین کو فراہم کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ یو تھ ایمپلائمنٹ پروگرام میں خصوصی بچوں کو پورا حصہ فراہم کیا جائے گا جبکہ یوتھ ایمپیکٹ چیلنج پروگرام کے تحت 5 بلین روپے کے انٹرسٹ فری قرضہ جات نوجوان طبقے کو فراہم کئے جارہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ آئی ٹی کے شعبے میں درسل پروگرام کے تحت بھی (stypends ) دیئے جاتے ہیں۔معاون خصوصی نے کہا کہ صوبے کی پہلی ٹیکنالوجی کا انتظامی کنٹرول انڈسٹری ڈیپارٹمنٹ سے محکمہ سائنس و ٹیکنالوجی کو منتقل کرنے پر بھی کام ہوا ہے اور آئندہ کابینہ اجلاس میں اس کا ایجنڈا پیش کیا جا ئیگا۔

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...