خیبر، ہسپتال میں 16گھنٹوں کا ناروالوڈشیڈنگ ، مریض رل گئے

خیبر، ہسپتال میں 16گھنٹوں کا ناروالوڈشیڈنگ ، مریض رل گئے

خیبر (بیورورپورٹ)ہسپتال میں سولہ گھنٹے لوڈشیڈنگ ظالمانہ اقدام ہے سولہ گھنٹے لوڈشیڈنگ سے تمام ڈیپا رٹمنٹ میں کام بند ہو گیا ہے حکو مت عملے سے چوبیس گھنٹے ڈیوٹی سرانجام دینا مانگتے ہیں جبکہ سہولیات نہ ہونے کی برابر ہیں اگر پیر کی دن تک لوڈشیڈنگ ختم نہیں کی گئی تو شدید احتجاج کر نے پر مجبو ر ہو جائینگے پیر میڈایکل ایسوسی ایشن قبائلی اضلا ع کے سابق صدر فضل الرحمن آفریدی، ضلع خیبر کے سابق صدر عبدالحلیم آفریدی،لنڈیکوتل صدرالطاف اور دیگر نے میڈیا سے گفتگو کر تے ہوئے کہا کہ واپڈا حکام نے ایجنسی ہیڈ کوارٹر ہسپتال پر بجلی لوڈشیڈنگ کا نیا شیڈول جا ری کرتے ہوئے سولہ گھنٹے کر دی گئی ہیں جس کی وجہ سے ہسپتال میں لیبر روم ،آپریشن تھیٹر ایمرجنسی سمیت دیگر ڈیپا رٹمنٹ میں کام بند ہو گئی ہیں جبکہ وارڈوں میں داخل مریض شدید سردی کی وجہ مشکلات سے دو چار ہیں انہوں نے کہا کہ حکومت نے ہسپتال میں بائیومیٹک سسٹم نصب کیا جس روزانہ سٹاف کی ڈیوٹیاں چیک کی جا تی ہے جس کا خیر مقدم کر تے ہیں لیکن اسکے ساتھ ہسپتال کو سہولیات بھی دی جائے سولہ گھنٹے لوڈشیڈنگ سے بائیومیٹک سسٹم بھی ناکامی سے دوچار ہو نگے پیر میڈایکل ایسوسی ایشن کے سابق صدور نے کہا کہ واپڈا حکام ڈیپارٹمنٹ کی سطح پر بجلی بل کا مسئلہ حل کریں ہسپتال پر بجلی لوڈشیدنگ زیا دہ ہونے سے مسئلہ حل نہیں ہو تا بلکہ مذیدخراب ہو جا تی ہیں اگر پیر کے دن تک لوڈشیڈ نگ ختم نہیں کی گئی تو شدید احتجاج کر نے پر مجبو رہو جائینگے جسکی تمام تر ذمہ داری واپڈا پر عائد ہو گی

مزید : کراچی صفحہ اول


loading...