لاہور ہائیکورٹ ورکرز ویلفیئر فنڈز میں بے ضابطگیاں، تحقیقات کا حکم

لاہور ہائیکورٹ ورکرز ویلفیئر فنڈز میں بے ضابطگیاں، تحقیقات کا حکم
لاہور ہائیکورٹ ورکرز ویلفیئر فنڈز میں بے ضابطگیاں، تحقیقات کا حکم

  


لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) لاہور ہائیکورٹ ویلفیئر فنڈز میں بے ضابطگیوں کی آڈٹ رپورٹ پر تحقیقات کا حکم دے دیا گیا۔ رپورٹ کے مطابق ایڈیشنل رجسٹرار عطا الرحمن نے بطور چیئرمین فنڈز کے استعمال میں اختیارات سے تجاوز کیا، شادی گرانٹس کی مد میں غیر قانونی ادائیگیاں کی گئیں۔

لاہور ہائیکورٹ ورکرز ویلفیئر فنڈ میں عجب کرپشن کی غضب کہانی کا انکشاف ہوا ہے۔ بتایا گیا ہے کہ ویلفیئر فنڈز کی آڈٹ رپورٹ میں بے ضابطگیاں سامنے آئی ہیں جن میں ریٹائرڈ جج لاہور ہائیکورٹ کے نائب قاصد کو غیر قانونی طور پر ویلفئیر فنڈز سے ادائیگی کے علاوہ شادی گرانٹس سمیت دیگر درخواستوں پر بھی قواعد و ضوابط کے خلاف ادائیگیاں شامل ہیں۔

رپورٹ میں مزید بتایا گیا ہے کہ مطابق ایڈیشنل رجسٹرار عطا الرحمن نے بطور چیئرمین فنڈز کے استعمال میں اختیارات سے تجاوز کیا، سابق چیف جسٹس کے اعزازیہ پر 8 لاکھ 19 ہزار ویلفیئر فنڈز سے ادا کئے اور سابق ایڈیشنل رجسٹرار کو ساڑھے 3 لاکھ کی غیرقانونی ادائیگی بھی ہوئی۔ کرپشن پر مشتمل آڈٹ رپورٹ سامنے آنے پر تحقیقات کا حکم دے دیا گیا ہے۔

مزید : علاقائی /پنجاب /لاہور


loading...