پاکستان میں ایک لاکھ 70 ہزار بیروزگار کا اضافہ، وفاقی ادارہ شماریات کی سروے رپورٹ جاری

پاکستان میں ایک لاکھ 70 ہزار بیروزگار کا اضافہ، وفاقی ادارہ شماریات کی سروے ...
پاکستان میں ایک لاکھ 70 ہزار بیروزگار کا اضافہ، وفاقی ادارہ شماریات کی سروے رپورٹ جاری

  

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن) وفاقی ادارہ شماریات کی جانب سے جاری اعدادو شمار کے مطابق پاکستان میں بیروزگار افراد کی تعداد میں ایک لاکھ 70 ہزار کا اضافہ ہوا ہے اور اب یہ تعداد 37 لاکھ 90 ہزار ہوگئی ہے۔

وفاقی ادارہ شماریات کی جانب سے لیبرفورس سروے رپورٹ 2017-2018 جاری کردی گئی ہے جس کے مطابق پاکستان میں بیروزگار افراد کی تعداد میں ایک لاکھ 70 ہزار کا اضافہ ہوا ہے اور اب یہ تعداد بڑھ کر 37 لاکھ 90 ہزار ہوگئی ہے۔ بیروزگاری کی شرح سب سے زیادہ پنجاب میں ہے جہاں 23 لاکھ 90 ہزار افراد روزگار سے محروم ہیں۔ بیروزگاری میں دوسرا نمبر سندھ کا ہے جہاں ساڑھے 7 لاکھ لوگ روزگار کی تلاش میں ہیں۔ خیبر پختونخوا میں ساڑھے 5 لاکھ اور بلوچستان میں ایک لاکھ 10 ہزار افراد بے روزگار ہیں۔

رپورٹ میںبتایا گیا ہے کہ پاکستان میں 2015 میں بیروزگار افراد کی تعداد 36 لاکھ 20 ہزار تھی، 2015کے مقابلے میں بیروزگاری کی شرح میں معمولی کمی ہوئی جس کی شرح 5.9 سے کم ہوکر 5.8 فیصد ہوئی ہے۔

وفاقی ادارہ شماریات کے مطابق پاکستان میں لیبرفورس کی تعداد 6 کروڑ55 لاکھ ہے جن میں سے 6 کروڑ 17 لاکھ لوگوں کے پاس روزگارہے۔ 2015 میں پاکستان میں لیبر فورس کی تعداد 6 کروڑ 10 لاکھ تھی اور اس وقت 5 کروڑ 74 لاکھ لوگ برسرِ روزگار تھے۔ بیروزگاری کی طرح روزگار کی شرح میں بھی پنجاب پہلے نمبر پر ہے جہاں 3 کروڑ 76 لاکھ لوگوں کے پاس روزگار ہے ۔ سندھ میں ایک کروڑ 44 لاکھ، خیبرپختونخوا میں 71 لاکھ اور بلوچستان میں 25 لاکھ لوگوں کے پاس روزگار ہے۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں شرح خواندگی میں بھی خاطر خواہ اضافہ ہوا ہے۔ ملک میں شرح خواندگی 60 اعشاریہ 7 فیصد سے بڑھ کر 62 اعشاریہ تین فیصد ہوگئی ہے جبکہ ناخواندہ افراد کی شرح کم ہوکر 37 اعشاریہ 9 فیصدرہ گئی ہے۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ پاکستان میں 36 اعشاریہ 9 فیصد لوگ میٹرک سے کم تعلیم رکھتے ہیں اور صرف 6 فیصد لوگوں کے پاس ڈگری یا اس سے اوپر کی تعلیم ہے۔

رپورٹ کے مطابق ملک میں شادی شدہ اور بیواؤں کی تعداد میں بھی اضافہ ہوا ہے، شادی شدہ افراد کی تعداد 52 اعشاریہ 6 سے بڑھ کر 53 اعشاریہ 5فیصد ہوگئی ہے۔ پاکستان میں  بیواؤں اور رنڈووں کی تعداد 3 اعشاریہ 6 ے بڑھ کر3 اعشاریہ 9 فیصد ہوگئی ہے۔  اس کے علاوہ کبھی شادی نہ کرنے والے افراد کی تعداد42 اعشاریہ 3 فیصد  ہے۔

مزید : قومی