محکمہ پبلک ہیلتھ علی پورمیں سیوریج منصوبہ، فنڈز ہضم کرنیکی تیاریاں مکمل

محکمہ پبلک ہیلتھ علی پورمیں سیوریج منصوبہ، فنڈز ہضم کرنیکی تیاریاں مکمل

  



مظفرگڑھ(نامہ نگار) محکمہ پبلک ہیلتھ کے کرپٹ افسران نے 52لاکھ کی گرانٹ پر کرپشن کے پنجے گاڑھ دیئے،سیوریج منصوبہ میں دونمبرمیٹریل اورپائپ لائن ڈال کرفنڈز ہڑپ کرنے کی تیاری، تفصیلات کے مطابق علی پور کے شہری مسلم لیگ ن کے ستی صدر چوہدری اشفاق احمد نے انٹی کرپشن کو دی گئی درخواست میں موقف اختیار کیاہے کہ علی پورمحلہ مستوئی والہ وارڈ نمبر14میں سیوریج کیلئے(بقیہ نمبر11صفحہ12پر)

لوکل گورنمنٹ نے 52لاکھ کی گرانٹ منظورکرالی جسے مقامی ایم پی اے نے ساز باز کرکے فنڈز پبلک ہیلتھ میں منتقل کروالئے اورتمام کام اپنے چہیتے سب انجینئر کو کرنے کا حکم دے دیا۔ سب انجینئر پبلک ہیلتھ نے سیوریج میں دونمبرپائپ ڈال کر بیس 3سے 4فٹ اونچی رکھ دی جس سے سیوریج کے پانی کانکاس نہ ہوسکاجس سے تمام منصوبہ سیوریج زمین میں دھنس گیا اورپورامحلہ گندے پانی کی لپیٹ میں آگیا جب شہریوں نے منصوبہ بارے شکایت کی تو نے کہا کہ دیگر افسران اپنا حصہ وصول کرچکے ہیں باقی رقم سے جوبھی کام ہوسکا میں نے کردیا ہے شہریوں عاشق حسین،فضل کریم،معشوق علی ودیگر نے شدید احتجاج کرتے ہوئے سب انجینئرکے خلاف کاروائی کامطالبہ کیاہے جبکہ انٹی کرپشن ڈیرہ غازیخان نے سب انجینئر کے خلاف فوری کاروائی شروع کردی ہے۔ عوامی سماجی حلقوں نے بھی ارباب اختیار سے انکوائری کرانے اورسب انجینئر کے خلاف کاروائی کا مطالبہ کیا ہے۔

منصوبہ

مزید : ملتان صفحہ آخر


loading...