پاک بھارت تباہ کن جنگ روکنے کیلئے سلامتی کونسل فیصلہ کن اقدا م کرے: پاکستا ن

پاک بھارت تباہ کن جنگ روکنے کیلئے سلامتی کونسل فیصلہ کن اقدا م کرے: پاکستا ن

  



نیویارک(آن لائن) پاکستان نے اقوامِ متحدہ کی سلامتی کونسل اور سیکرٹری جنرل انتونیو گوتریس سے مطالبہ کیا ہے پاکستان اور بھارت کے درمیان تباہ کن جنگ روکنے کیلئے فیصلہ کن اقدام کریں، پاکستان بھارت کے ساتھ جنگ نہیں چاہتا لیکن جیسا کہ ہم نے فروری2019ء میں دکھایا کہ اگر پاکستان پر حملہ کیا گیا تو ہم اس کا بھرپور جواب دیں گے۔ اقوامِ متحدہ میں پاکستان کے مندوب منیر اکرم نے سلامتی کونسل کے اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سلامتی کونسل اور سیکرٹری جنرل سے درخواست کرتا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی سنگین خلاف ورزیوں کے خاتمے اور کشمیریوں کو ان کا حقِ خوداردیات استعمال کرنے دینے کا مطالبہ کریں۔ سلامتی کونسل کے اجلاس میں منیر اکرم نے مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے آگاہ کیا۔ان کا کہنا تھا کہ بھارت کی قابض 9لاکھ فوج نے پانچ ماہ سے کشمیر کی وادی میں 80لاکھ افراد کو ظالمانہ کرفیو میں قید رکھا ہے جبکہ وہاں مواصلاتی روابط بھی معطل ہیں۔انہوں نے بتایا کہ تمام کشمیری رہنما بھارت بھر کی جیلوں میں قید ہیں، ہزاروں نوجوانوں کو اغوا، جبری حراست، اعضا کو نقصان اور تشدد کا نشانہ بنایا گیا۔ان کا مزید کہنا تھا کہ خواتین کو جنسی طور پر ہراساں کیا گیا۔منیر اکرم نے کہا کہ پاکستانی وفد نے ان اطلاعات پر مشتل ڈوزیئر صحافیوں اور مبصرین کو فراہم کیا تھا جو بھارت کی جانب سے کشمیریوں پر نافذکیے گئے خوف و تشدد کے ماحول کو واضح کرتا ہے۔پاکستانی مندوب کا کہنا تھا کہ ملک کے حوالے سے بھارت کے جارحانہ ارادے بھی بے نقاب ہوچکے ہیں۔اس موقع پر انہوں نے بھارت کی جانب سے جاری کردہ سیاسی نقشے کی مثال پیش کی جس میں مقبوضہ کشمیر کے ساتھ آزاد کشمیر اور گلگت بلتستان کو بھارت کا حصہ دکھایا گیا ہے۔ان کا مزید کہنا تھا کہ بھارتی وزیر خارجہ نے شیخی بگھاری تھی کہ ایک دن وہ اس خطے کا کنٹرول حاصل کرلیں گے۔منیر اکرم نے بھارت کی جانب سے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی اور بھارتی آرمی چیف کی جانب سے پاکستان کے خلاف پیشگی حملے کے بیان کا بھی ذکر کیا۔

پاکستان

مزید : صفحہ اول


loading...