قرآن پاک پڑھنے کے ساتھ اس پر غور و فکر ضروری ہے،حافظ ادریس

  قرآن پاک پڑھنے کے ساتھ اس پر غور و فکر ضروری ہے،حافظ ادریس

  



لاہور(نمائندہ خصوصی) نائب ناظم اعلیٰ تحریک منہاج القرآن علامہ رانا محمد ادریس نے جامع المنہاج ماڈل ٹاؤن میں جمعۃ المبارک کے بڑے اجتماع سے ”قرآن اور ہم“ کے موضوع پر خطاب کرتے ہوئے کہا کہ قرآن حکیم انسانیت کیلئے کتاب ہدایت ہے۔قرآن کریم کا یہ اعجاز ہے کہ اس کی کسی ایک آیت کی تفصیل میں جائیں تو اس میں پوری زندگی کا خاکہ نظر آتا ہے۔قرآن حکیم پڑھنے کے ساتھ اس پر غور وفکر ضروری ہے

زندگی کے تمام پہلوؤں کو زیر بحث لاتا ہے لیکن شرط یہ ہے کہ آدمی اس پر غور و فکر کرے اور قرآن پاک کو سمجھ کر پڑھنے کی کوشش کرے۔ قرآن حکیم کی جب بھی پڑھیں تو اس نظر سے پڑھیں کہ اللہ کریم کا یہ حکم میرے لئے ہے۔روئے زمین کے تمام انسان قرآن کریم کا مخاطب ہیں۔ علامہ رانامحمد ادریس نے کہا کہ اللہ تعالیٰ نے ہر خشک و تر کا علم قرآن مجید میں رکھاہے۔

اور اسے ہر قسم کی کمی بیشی سے پاک رکھتے ہوئے اس کی حفاظت کا ذمہ بھی خود لیا۔ اللہ تعالیٰ نے اپنے خاص کرم سے اس لاریب اوربے مثل کتاب کا وارث امت محمدی کو بنایا۔ امت محمدی کو یہ شرف تاجدار کائنات ﷺ سے نسبت غلامی کی وجہ سے حاصل ہوا۔ مگر آج ہم نے قرآنی تعلیمات سے منہ موڑ لیا جس کا نتیجہ ہے کہ امت مسلمہ زوال پذیر ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4