طیبہ تشدد کیس، سابق جج راجا خرم زمان اور اہلیہ کی ٹرائل کورٹ سزا برقرار

طیبہ تشدد کیس، سابق جج راجا خرم زمان اور اہلیہ کی ٹرائل کورٹ سزا برقرار

  



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سپریم کورٹ نے طیبہ تشدد کیس میں سابق جج راجا خرم کی تین سال کی سزا کالعدم قرار دیتے ہوئے ایک سال کی سزا برقرار رکھی۔سپریم کورٹ کے جج جسٹس اعجاز الحسن نے طیبہ تشدد کیس میں ملزموں کی اپیلوں پر فیصلہ سنایا۔ عدالت نے ملزمان راجہ خرم اور ماہین ظفر کی ٹرائل کوٹ کی دی گئی ایک ایک سال کی سزائیں بحال کر دیں۔ عدالت نے سزاؤں میں مزید اضافے کی حکومتی اپیل پر ملزمان کو نوٹس جاری کر دیئے۔عدالت نے نوٹس آرٹیکل 187 کا خصوصی اختیار استعمال کرتے ہوئے کہا کہ ملزمان کی سیکشن 328 اے کے تحت سزا کیخلاف اپیلیں زیر التواء ہے لہٰذااڈیالہ جیل انتظامیہ ملزمان کو عدالتی نوٹس سے آگاہ کرے۔ عدالت نے قرار دیا کہ رجسٹرار آفس ملزمان کو نوٹس موصول ہوتے ہی اپیل سماعت کیلئے مقرر کرے۔ 

طیبہ تشدد کیس

مزید : صفحہ آخر