نیو اسلام آباد ائیر پورٹ پرامیگریشن عملہ نہ ہونے کے باعث مسافر خوار

نیو اسلام آباد ائیر پورٹ پرامیگریشن عملہ نہ ہونے کے باعث مسافر خوار

  



اسلام آباد(آن لائن)نیوائیرپورٹ اسلام آبادپرامیگریشن کاعملہ نہ ہونے کے باعث ملکی اورغیرملکی پروازوں کے مسافرلمبی قطاروں میں خوارہوگئے،لوگوں کی سہولت کیلئے 30امیگریشن کاؤنٹربنائے گئے لیکن روزانہ کی بنیادپرصرف تین کاؤنٹرکھولے گئے ہیں۔امیگریشن کیلئے لوگوں کاگھنٹوں انتظارکی زحمت سے گذرنامعمول بن گیاہے۔تربیت یافتہ امیگریشن کے اہلکارسفارشی بنیادوں پرایف آئی اے کی ہوم برانچوں یامال بنانے والی پوسٹوں پرکوچ کرگئے۔تفصیلات کے مطابق وفاقی دارالحکومت کانیوائیرپورٹ اس وقت شہریوں کیلئے سہولت کاباعث بننے کے بجائے ذہنی اذیت کاباعث بناہواہے۔مسافروں کوامیگریشن کے عمل سے گزارنے کیلئے نئے ائیرپورٹ پر30کاوٗئنٹرزبنائے گئے تھے لیکن عملہ نہ ہونے کے باعث صرف تین کاؤنٹرزکھولے جاتے ہیں،جس کی وجہ سے شہریوں کوگھنٹوں لمبی قطاروں میں کھڑارہناپڑتاہے۔امیگریشن کے دوران سب سے زیادہ تکلیف معمرشہریوں کواٹھاناپڑتی ہے جوکہ مسلسل قطاروں میں کھڑے نہیں ہوسکتے۔اس حوالے سے ایف آئی اے حکام سے رابطہ کیاگیاتوان کاکہناتھاکہ تربیت یافتہ عملے کی کمی کی وجہ سے تین کاؤنٹرزکھولے جاتے ہیں۔جن اہلکاروں کوتربیت دلوائی گئی تھی ان میں بڑی تعدادخواتین کی بھی تھی لیکن ان میں زیادہ اہلکاروں نے سیاسی بنیادوں پراپنے تبادلے ایف آئی اے میں اپنے ہوم اسٹیشن پرکروالئے اوریاپھرتربیت یافتہ اہلکاروں نے ایسی جگہوں پرتبادلے کروالئے جہاں پرروازانہ کی بنیادپرلاکھوں روپے کی کرپشن ہوتی ہے اس لئے امیگریشن کیلئے اب عملہ نہ ہونے کے برابرہے۔

نیوائرپورٹ 

مزید : صفحہ آخر


loading...