کانگریسی راج میں ”سی اے اے،این آر سی“ نہیں چلے گا، پریانکا گاندھی

کانگریسی راج میں ”سی اے اے،این آر سی“ نہیں چلے گا، پریانکا گاندھی

  



نئی دہلی(آئی این پی)کانگریس کے جنرل سکریٹری پریانکا گاندھی نے کہا ہے کہ کانگریس اقتدار میں آنے کے بعد بی جے پی کے کالے قوانین ”سی اے اے، این آر سی“ کو ختم کر دے گی، آئین سے متصادم قوانین کو ہر گز ہر گز نافذالعمل نہیں رکھا جائے گا، ایسے قوانین ملک میں بد امنی پیدا کرنے کا سبب بنتے ہیں، کانگریس سی اے اے کے مخالف مظاہرین کو قانونی مدد فراہم کرنے کے لئے ایک سیل قائم کرے گی تا کہ ان لوگوں کو قانون کے شکنجے سے چھڑایا جا سکے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق کانگریس کے جنرل سکریٹری پریانکا گاندھی نے جمعے کے روز مودی جی کے حلقے وارانسی پہنچی اور گفتگو کی جس میں انہوں نے اعلان کیا کہ کانگریس اقتدار میں آنے کے بعد بی جے پی کے کالے قوانین ”سی اے اے، این آر سی“ کو ختم کر دے گی۔ آئین سے متصادم قوانین کو ہر گز ہر گز نافذالعمل نہیں رکھا جائے گا۔انہوں نے اس بل پر تنقید کرتے ہوئے مزید کہا کہ یہ ایک کالا قانون نے جو آئین سے متصادم ہے۔ اس قانون سے ملک میں بد امنی پیدا ہوئی ہے۔ عوام کے حق پر ڈاکا مارا گیا ہے۔ بی جے پی حکومت کسانوں، نوجوانوں اور طلباء کا استحصال کر رہی ہے ہم اقتدار میں آ کر کسانوں، مزدوروں، نوجوانوں اور طلبا سے اپنے حقوق کی جنگ میں تعاون کا وعدہ کرتے ہیں۔ کانگریس سی اے اے کے مخالف مظاہرین کو قانونی مدد فراہم کرنے کے لئے ایک سیل قائم کرے گی تا کہ ان لوگوں کو قانون کے شکنجے سے چھڑایا جا سکے

مزید : علاقائی


loading...