کراچی، جمالی گوٹھ میں ذاتی دشمنی پر خاتون اور 2بچوں کو قتل کر دیا گیا 

کراچی، جمالی گوٹھ میں ذاتی دشمنی پر خاتون اور 2بچوں کو قتل کر دیا گیا 

  



کراچی (کرائم رپورٹر)کراچی کے علاقے سپرہائی وے جمالی گوٹھ میں فائرنگ کا واقعہ پیش آیا ہے،جہاں ذاتی دشمنی پر مخالف پارٹی نے خاتون اور بچوں پر اندھا دھند فائرنگ کرکے موت کے گھاٹ اتاردیا ہے۔ایس ایس پی ضلع شرقی تنویر عالم اوڈھو کے مطابق سہراب گوٹھ تھانے کی حدود غریب آباد گوٹھ میں رہائش پذیر تاج محمد جمالی کے گھر پر ان کے قریبی رشتے دار آئے۔اہل خانہ نے ان کا استقبال کیا، انہیں گھر میں بٹھایا اور ملزمان نے انڈے پراٹھے کا ناشتہ تیار کرنے کی فرمائش کی،جس پر اہل خانہ نے ناشتہ تیار کرکے انہیں پیش کیا۔ناشتہ کرنے کے بعد ملزمان نے گھر میں موجود خاتون خانہ شازیہ کو گولیاں ماریں، اسی طرح گھر کے باہر گلی میں کھیلتے ہوئے تاج محمد جمالی کے 2 بیٹوں 5 سالہ ماجد اور 4 سالہ یاسین کو ڈھونڈ کر گولیوں کا نشانہ بنایا۔ایس ایس پی کے مطابق تاج محمد جمالی نے 5 ماہ قبل خاندانی تنازع پر سندھ کے شہر شہداد کوٹ میں اپنے قریبی رشتے دار کو قتل کر دیا تھا اور خوں اہلِ خانہ کے ہمراہ فرار ہو کر کراچی آ گیا تھا اور کرائے کہ اس گھر میں مقیم ہو گیا۔پولیس کے مطابق مخالف فریق تاج محمد کے قریبی رشتہ دار ہیں، اہلِ خانہ نے ملزمان نواب اور دلدار کے خلاف رپورٹ درج کرائی ہے۔ملزمان فائرنگ کرنے کے بعد باآسانی فرار ہونے میں کامیاب ہو گئے، پولیس اس سلسلے میں تحقیقات کر رہی ہے۔

مزید : صفحہ اول