چین میں پاکستانی طلبہ کو مالی مشکلات، خیبر پختونخوا حکومت نے نوٹس لے لیا

چین میں پاکستانی طلبہ کو مالی مشکلات، خیبر پختونخوا حکومت نے نوٹس لے لیا
چین میں پاکستانی طلبہ کو مالی مشکلات، خیبر پختونخوا حکومت نے نوٹس لے لیا

  



پشاور (ویب ڈیسک) چین میں پاکستانی طلبہ کو درپیش مالی مشکلات کے حوالے سے چلنے والی خبروں پر خیبر پختونخواکے مشیر برائے اعلیٰ تعلیم نے نوٹس لے لیا ہے۔خیبر پختونخوا کے 32 طلبہ چین میں زیر تعلیم ہیں، جنہیں چار ماہ سے ہائر ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ نے پیسے نہیں بھیجے گئے۔ دنیا نیوز کے مطابق مشیر برائے اعلیٰ تعلیم خلیق الرحمان نے خبروں کا نوٹس لیتے ہوئے پیر کے دن اجلاس میں معاملہ اٹھانے کا فیصلہ کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ طلبہ حکومت کی ذمہ داری ہیں اور ان کے تمام مسائل حل کئے جائیں گے۔خیال رہے کہ ملک وقوم کا نام روشن کرنے کی غرض سے چین میں زیر تعلیم طلبہ کو خیبر پختونخوا حکومت نے لاوارث چھوڑ دیا ہے۔

سرکاری اخراجات پر بیرون ملک جانے والے نوجوان پائی پائی کے محتاج ہو گئے ہیں۔سرکاری خرچ پر چین میں زیر تعلیم نوجوان چار ماہ سے ادائیگیوں کے منتظر ہیں، مگر روزمرہ اخراجات کے پیسے نہ ہونے کے باعث وہ پائی پائی کو محتاج ہو چکے ہیں۔طلبہ کا کہنا ہے کہ انہوں نے وظیفہ جاری کرنے کے لیے سٹیزن پورٹل پر بھی شکایات درج کروائی لیکن کوئی سنوائی نہیں ہوئی۔طلبہ نے وزیراعظم اور وزیراعلیٰ خیبر پختونخوا سے اپیل کی ہے کہ وہ جلد سے جلد وظیفہ جاری کرنے کے احکامات دیں تاکہ ملک سے دور رہ کر وہ قوم کا نام روشن کر سکیں۔

مزید : علاقائی /خیبرپختون خواہ /پشاور


loading...