جس رات امریکہ نے قاسم سلیمانی کو ہلاک کیا، اُسی رات کون سا خوش نصیب جنرل امریکی حملے میں بچ گیا؟ انتہائی حیران کن انکشاف سامنے آگیا

جس رات امریکہ نے قاسم سلیمانی کو ہلاک کیا، اُسی رات کون سا خوش نصیب جنرل ...
جس رات امریکہ نے قاسم سلیمانی کو ہلاک کیا، اُسی رات کون سا خوش نصیب جنرل امریکی حملے میں بچ گیا؟ انتہائی حیران کن انکشاف سامنے آگیا

  



واشنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ دنوں امریکی فوج نے عراق میں میزائل حملہ کرکے ایرانی فوج کے میجر جنرل قاسم سلیمانی کو قتل کر دیا تھا۔ اب انکشاف منظرعام پر آیا ہے کہ اسی روز امریکہ کی طرف سے یمن میں بھی ایرانی فوج کے ایک اعلیٰ عہدیدار پر قاتلانہ حملہ کیا گیا تھا تاہم یہ حملہ ناکام رہا۔ میل آن لائن کے مطابق اس ایرانی فوجی عہدیدار کا نام عبدالرضا شھلائی ہے جو ایرانی پاسداران انقلاب کی قدس فورس کے اعلیٰ ترین کمانڈرز میں سے ایک ہیں، جس کے سربراہ میجر جنرل قاسم سلیمانی تھے۔

رپورٹ کے مطابق اس انکشاف سے ظاہر ہوتا ہے کہ امریکی صدر ڈونلڈٹرمپ قدس فورس کی قیادت کو ختم کرنے کے لیے بڑی منصوبہ بندی رکھتے تھے۔ امریکی فوج کے اعلیٰ عہدیداروں کے حوالے سے واشنگٹن پوسٹ نے اپنی رپورٹ میں یہ انکشاف کیا۔ اخبار نے لکھا ہے کہ عراق اور یمن میں قاسم سلیمانی اور عبدالرضا شھلائی پر بیک وقت حملہ کیا گیا تھا تاہم عبدالرضا شھلائی اس حملے میں محفوظ رہے۔ امریکی فوجی عہدیداروں کا کہنا تھا کہ ”پینٹا گون بیک وقت دو سٹرائیکس کی کامیابی کا اعلان کرتا لیکن اس نے شھلائی پر حملے کا ذکر نہیں کیا کیونکہ وہ ناکام ہو گیا تھا۔“ رپورٹ کے مطابق عبدالرضا شھلائی یمن میں متحرک ہیں۔ وہ قدس فورس کے سرکردہ کمانڈر ہونے کے ساتھ ساتھ اس فورس کے بڑے فنانسر بھی ہیں۔

مزید : بین الاقوامی