چھوٹی بچیوں کو اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والے مولوی کی جیل میں موت

چھوٹی بچیوں کو اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والے مولوی کی جیل میں موت
چھوٹی بچیوں کو اپنی جنسی ہوس کا نشانہ بنانے والے مولوی کی جیل میں موت

  



لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) برطانیہ میں کم سن بچیوں کو جنسی درندگی کا نشانہ بنانے والے مولوی کی جیل میں موت واقع ہو گئی۔ میل آن لائن کے مطابق 83سالہ محمد صادق نامی یہ شخص ویلز کے دارالحکومت کارڈف کی مدینہ مسجد میں بچوں کو قرآن مجید پڑھاتا تھا جہاں اس نے 4بچیوں کو اپنی ہوس کا نشانہ بنایا جن کی عمریں 5سے 13سال کے درمیان تھیں۔ اسے 2017ءمیں 13سال قید کی سزا سنا کر پارک جیل بھیجا گیا تھا جہاں گزشتہ روز اس کی موت واقع ہو گئی۔

رپورٹ کے مطابق عدالت میں اس پر بچیوں کو 14بار جنسی زیادتی کا نشانہ بنانے کا جرم ثابت ہوا تھا۔ اس نے ان بچیوں کو 1996ءسے 2006ءکے درمیان ہوس کا شکار بنایا۔ اس کی فیملی کی درخواست پر اس جنسی درندے کا جنازہ اسی مسجد میں پڑھایا جائے گا جہاں وہ بچیوں کے ساتھ درندگی کرتا رہا۔ تاہم علاقے کے مسلمان مسجد انتظامیہ کے اس فیصلے پر کڑی تنقید کر رہے ہیں۔ مدینہ مسجد کے ایک نمازی کا کہنا تھا کہ ”میرے خیال میں مسجد کی انتظامیہ کو اپنے فیصلے پر نظرثانی کرنی چاہیے۔ وہ شخص کم سن بچیوں کے ساتھ جنسی زیادتی کا مرتکب قرار پا چکا ہے۔ ایسے گھناﺅنے جرم کا ارتکاب کرنے والے شخص کا جنازہ مسجد میں نہیں ہونا چاہیے۔“

مزید : ڈیلی بائیٹس


loading...